Homeحیدرآباد

تلنگانہ کے شعبہ طب میں معیاری تبدیلیاں: ہریش راؤ

ہریش راو نے مہندرا کمپنی کے زیر اہتمام ظہیر آباد ایریا اسپتال میں آکسیجن جنریشن پلانٹ کے قیام کو قابل ستائش قراردیا۔یہ ریاست کا 86 واں آکسیجن جنریشن پلانٹ ہے۔

تلنگانہ کے شعبہ طب میں معیاری تبدیلیاں: ہریش راؤ

مکہ مسجد میں بم دھماکہ کے 15مکمل
مسلم وکلا کو سرکاری طور پر نمائندگی دینے کی اپیل
این ایس یو آئی کے  18 کارکنوں کی ضمانت منظور

حیدرآباد: ریاستی وزیر صحت ہریش راو نے مہندرا کمپنی کے زیر اہتمام ظہیر آباد ایریا اسپتال میں آکسیجن جنریشن پلانٹ کے قیام کو قابل ستائش قراردیا۔یہ ریاست کا 86 واں آکسیجن جنریشن پلانٹ ہے۔کورونا کی دوسری لہر میں 500 میٹرک ٹن آکسیجن کی ضرورت تھی لیکن صرف 200 میٹرک ٹن آکسیجن دستیاب تھا۔بقیہ 300 میٹرک ٹن آکسیجن ٹاملناڈو اور گوا کی ریاستوں سے حاصل کرنے کے لیے مساعی کی گئی تھی۔

اس صورتحال کو دیکھتے ہوئے چیف منسٹر نے آکسیجن کی پیداوار کو 500 میٹرک ٹن تک بڑھانے کا حکم دیا۔موجودہ طورپر ریاست 300 میٹرک ٹن آکسیجن کی پیداوار تک پہنچ چکی ہے۔ ہم نے مزید 200 میٹرک ٹن آکسیجن پیدا کرنے کے لیے پشا میلارم علاقہ میں ایک پلانٹ لگانے کے سلسلہ میں معاہدہ کیا ہے۔ یہ پلانٹ جلد شروع ہو جائے گا۔

انہوں نے نشاندہی کرتے ہوئے کہا کہ ریاست میں 27 ہزار بستر ہیں۔ ہر ایک بستر کے لیے آکسیجن کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ کسی بھی صورت میں آکسیجن کی کمی نہیں ہونے دی جائے گی۔انہوں نے کہاہم نے طبی میدان میں معیاری تبدیلیاں کی ہیں۔کے چندرشیکھرراو کی ہدایت پر کئے گئے فیورسروے کے بہترنتائج سامنے آرہے ہیں۔

ریاست میں مسلسل دوسرے اور تیسرے دن کووڈ مثبت شرح میں کمی آئی رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم تمام کو ماسک کا استعمال کرنا چاہئے اور ٹیکہ لینا چاہئے۔انہوں نے کہا کہ غریبوں کو بہترین طبی خدمات فراہم کرنے کے معاملے میں تلنگانہ ملک کی تیسری بڑی ریاست ہے۔

انہوں نے کہاکہ ظہیر آباد ایریا اسپتال کو ترقی دی جائے گی۔اس اسپتال میں آکسیجن پلانٹ کا افتتاح کرنے کے بعد وزیر ہریش راؤ نے اسپتال کے مختلف شعبہ جات کا معائنہ کیا۔انہوں نے کہا کہ ایریا اسپتال میں جلد ہی 50 بستروں پر مشتمل ایم سی ایچ سنٹر قائم کیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ کے سی آرکٹس کے ذریعہ سرکاری اسپتالوں میں زچگیوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے۔

وزیر نے اس موقع پر اسپتال کے اہلکاروں کو مبارکباد دی اور کہا کہ ظہیر آباد کے سرکاری اسپتال میں بھی نارمل ڈیلیوری ہورہی ہے۔انہوں نے ڈاکٹرس کو ہدایت دی کہ غیر ضروری طور پر سرجری نہ کریں۔ انہوں نے کہا کہ پیشہ اور ملازمت کی اخلاقیات کو اس اسپتال کے اہلکار نہ بھولیں۔