آنگ سان سوچی‘ اقوام متحدہ جنرل اسمبلی اجلاس میں شرکت نہیں کریں گی

میانمار کی قائد آنگ سان سوچی جاریہ ہفتہ اقوام متحدہ جنرل اسمبلی اجلاس میں شرکت نہیں کریں گی۔ ان کے ترجمان نے آج یہ بات بتائی۔ نوبل انعام یافتہ سوچی کو شدید تنقید کا سامنا ہے کہ انہوں نے میانمار کی ریاست رکھائن سے جان بچاکر بنگلہ دیش بھاگنے والے روہنگیا مسلمانوں کے حق میں آوازنہیں اٹھائی۔ بنگلہ دیش ‘روہنگیا پناہ گزینوں کو راحت فراہم کرنے میں شدید مشکلات کا سامنا کررہا ہے۔ پناہ گزینوں میں 60 فیصد بچے ہیں۔ مزید 9 ہزار ریفیوجی آج بنگلہ دیش پہنچ گئے۔ حکام ایک نیا کیمپ بسانے کے لئے سرگرداں ہیں کیونکہ ہزاروں پناہ گزینوں کے سر پر کوئی چھت نہیں ہے۔ کئی دہوں میں میانمار کی پہلی سیول قائد سوچی کا طاقتور فوج پر کوئی کنٹرول نہیں جس نے 2015 میں الیکشن کرانے سے قبل 50 برس تک ملک پر حکمرانی کی تھی۔ میانمار کی بدھست اکثریت میں روہنگیا مسلمانوں کے لئے بہت کم ہمدردی پائی جاتی ہے۔ ان بے وطنوں کو بنگالی کہا جاتا ہے۔ مظلوموں کی مسیحہ کی حیثیت سے سوچی کی ساکھ کو روہنگیا بحران نے بھاری نقصان پہنچایا ہے۔

جواب چھوڑیں