کے سی آر کی تائید پر سنگارینی کالریز ورکرس کو پچھتا وا . کل جماعتی قائدین کا صحافت سے ملاقات پروگرام

صدرپردیش کانگریس این اتم کما ریڈی نے کہا کہ سنگارینی کالریز ورکرس نے 2014ءانتخابات میں ٹی آر ایس کو اس امید میں ووٹ دے کر کامیاب بنایا تھا کہ کے چندر شیکھر راو¿ ورکرس کے مسائل کو حل کریں گے۔ مگر بر سر اقتدار آنے کے بعد چیف منسٹر کے سی آر ان ورکرس کے مسائل حل کرنے میں یکسر ناکام رہے ہیں۔ پریس کلب سوماجی گوڑہ میں صحافت سے ملاقات پروگرام میں اظہار خیال کرتے ہوئے اتم کمار ریڈی نے کہا کہ سنگارینی کالریز ورکرس کو اب پچھتا وا ہورہا ہے۔ آخر کیوں انہوں نے ٹی آر ایس کو کامیاب بنایا تھا۔ کے سی آر نے سنگارینی سوپر اسپیشالیٹی ہاسپٹل کی تعمیر کرانے کے وعدہ کو بھی پورا کرنے میں ناکام رہے۔ مزدوروں کو انکم ٹیکس سے مستثنیٰ قرار دینے، تلنگانہ کے قیام کے بعد اوپن کاسٹ کو بند کرنے کا اعلان کیا تھا لیکن مزید اوپن کاسٹ شروع کئے گئے۔ سی پی آئی سکریٹری چاڈا وینکٹ ریڈی نے کہا کہ متحدہ ریاست میں انتخابات کے وقت کے سی آر نے تلنگانہ جذبات اور وعدوں کی وجہ سے کامیابی حاصل کی تھی۔ تلنگانہ تلگو دیشم کے کارگزار صدر ریونت ریڈی نے کہا کہ تلنگانہ تحریک میں سنگارینی کے مزدوروں کا کلیدی کردار رہا۔ تلنگانہ کے قیام کے بعد سنگارینی مزدوروں کو کے سی آر نے فراموش کردیا ہے۔ مزدوروں کو بونس کا وعدہ وفا نہ ہوسکا۔ کے سی آر نے صرف جھوٹے وعدوں کے ذریعہ 2014ءمیں کامیابی حاصل کی تھی۔ اس موقع پر دیگر قائدین نے بھی خطاب کیا۔

جواب چھوڑیں