سی بی آئی کو چاہیے کہ مجھ سے سوالات کرے ، فرزند کو ہراساں نہ کرے : چدمبرم

 سابق وزیر فینانس پی چدمبرم نے آج کہا سی پی آئی کو چاہیے کہ وہ میاکسس کیس میں ان کے فرزند کارتی کو ہراساں کرنے کے بجائے مجھ سے سوالات کرے۔ انھوں نے تحقیقاتی ایجنسی پر غلط اطلاع پھیلانے کا الزام عائد کیا۔ 2006ءمیں جب کہ کارتی کے والد چدمبرم وزیر فینانس تھے ، ایرسیل ۔ میاکسس معاملت میں دی گئی بیرونی سرمایہ کاری کی کلیرنس کے سلسلہ میں سی بی آئی نے کل پوچھ تاچھ کے لیے کارتی کو طلب کیا تھا۔ کارتی نے یہ کہتے ہوئے حاضر ہونے سے انکار کردیا کہ خصوصی عدالت نے تمام ماخوذ افراد کو ڈسچارج کردیا ہے اور معاملہ میں کارروائی کو ختم کردیا ہے۔ اس ادّعا سے سی بی آئی کو تضاد ہے۔ اس کا کہنا ہے کہ تحقیقات ابھی جاری ہیں۔ پی چدمبرم نے ٹوئٹر پر تحریر کیا کہ ایف آئی پی نے سفارش کی اور میں نے منظوری دی۔ سی بی آئی کو چاہیے کہ وہ مجھ سے سوالات کرے اور کارتی چدمبرم کو ہراساں نہ کرے۔

جواب چھوڑیں