شمالی کوریا نے جاپان کے اوپر سے پھر مزائل داغا

شمالی کوریا نے آج جاپان کے اوپر سے بحرالکاہل میں بالسٹک مزائل داغا۔ اس نے اقوام متحدہ کی نئی تحدیدات کا یہ جواب دیا ہے۔ نیویارک میں سلامتی کونسل نے ہنگامی اجلاس طلب کرلیا ہے۔ امریکی بحرالکاہل کمانڈ نے توثیق کی ہے کہ یہ راکٹ‘ انٹرمیڈیٹ رینج بالسٹک مزائل (آئی آر بی ایم) ہے۔ یہ شمالی امریکہ یا امریکی بحرالکاہل علاقہ گوام کے لئے کوئی خطرہ نہیں۔ جنوبی کوریا کی وزارت دفاع کا کہنا ہے کہ اس مزائل نے لگ بھگ 3700 کیلو میٹر کا فاصلہ طے کیا اور وہ 770 کیلو میٹر اعظم ترین بلندی تک پہنچا۔ اس نے عہد کیا کہ اقوام متحدہ کی تحدیدات کے جواب میں امریکہ کو مار جھیلنی ہوگی۔ شمالی کوریا نے کہا کہ اس نے آج تک کا سب سے بڑا دھماکہ کیا ہے۔ اس نے کہا کہ اس کا ہائیڈروجن بم اتنا چھوٹا ہے کہ اسے مزائل میں نصب کیا جاسکتاہے۔ شمالی کوریا کے مزائل داغنے کے بعد سائرن بجنے اور ٹیکسٹ میسیج الرٹ سے لاکھوں جاپانی گھبرا گئے ۔ ایسا لگتا ہے کہ شمالی کوریا نے مزائل داغا ہے۔ ٹی وی پر ناشتہ کے وقت کے پروگرامس جو عامطورپر بچوں کے پروگرام ہلکے پھلکے پروگرامس پر مشتمل ہوتے ہیں‘ وارننگ دکھانے لگے کہ عمارت یا بیسمنٹ میں پہنچ جائیے۔

جواب چھوڑیں