لندن ٹیوب ٹرین دھماکہ‘ ایک نوجوان گرفتار

برطانوی پولیس نے ہفتہ کے دن جنوبی بندرگاہ ڈوور میں ایک 18 سالہ نوجوان کو گرفتار کیا ہے۔ یہ گرفتاری کل کے لندن ٹیوب ٹرین دھماکہ کیس کی تحقیقات کے سلسلہ میں ”اہم “ پیش رفت مانی جارہی ہے۔ ٹرین دھماکہ میں کل 30 افراد زخمی ہوئے تھے۔ وزیراعظم تھیریسا مے نے جمعہ کے دن برطانیہ کو ایسا سیکوریٹی الرٹ جاری کیا تھا جس کا مطلب یہ ہوتا ہے کہ حملہ یقینی ہے۔ اہم مقامات پر فوج اور پولیس تعینات کردی گئی تھی۔ جمعہ کی صبح مصروف اوقات میں مغربی لندن میں مسافرین سے بھری ٹیوب ٹرین میں دیسی ساختہ بم پھٹا تھا۔ ایسا لگتا ہے کہ یہ پوری طرح نہیں پھٹ سکا۔ انسداد ِ دہشت گردی وِنگ کے سینئر نیشنل کوآرڈینیٹر نیل باسو نے بتایا کہ ہم نے آج صبح ایک اہم گرفتاری کی ہے۔ تحقیقات کی پیش رفت سے ہم مطمئن ہیں لیکن تحقیقات جاری رہیں گی۔ چوکسی بھی اتنی ہی برقرار رہے گی۔ گرفتاری ‘ ڈوور کے بندرگاہی علاقہ سے ہوئی جہاں سے مسافرین کو چھوٹی کشتیاں فرانس لے جاتی ہیں۔ پارسنس گرین انڈر اسٹیشن میں لندن ٹیوب ٹرین میں دھماکہ برطانیہ میں جاریہ سال 5 واں بڑا دہشت گرد حملہ ہے۔ اس کی ذمہ داری اسلامک اسٹیٹ نے لی ہے۔ برطانیہ نے ہفتہ کے دن اہم دفاعی مقامات جیسے نیوکلیر برقی پلانٹس اور وزارت ِدفاع کی تنصیبات پر سینکڑوں سپاہی تعینات کردیئے۔

جواب چھوڑیں