ٹرمپ انتظامیہ کےلئے سلامتی کونسل میں اصلاح اولین ترجیح :نکی ہیلی

واشنگٹن۔16 ستمبر ( پی ٹی آئی) اقوام متحدہ میں امریکی سفیر نکی ہیلی نے بتایا کہ ٹرمپ انتظامیہ کی اولین ترجیح اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی اصلاح ہے جبکہ ہندوستان کے بشمول کئی ممالک اس کامطالبہ کررہے ہیں۔ اس سے قبل صدرامریکہ ڈونالڈ ٹرمپ آئندہ ہفتہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی اپنی پہلی تقریر کے لےے تیار ہوچکے تھے ۔ انہوں نے بتایا کہ سیکیورٹی کونسل اصلاح کے بارے میں اس وقت بھی بات چیت جاری ہے ۔ 19 تا25 ستمبر جنرل اسمبلی کے سالانہ اجلاس سے قبل وائٹ ہاوز میں پریس کانفرنس کو مخاطب کرتے ہوئے ہیلی نے بتایا کہ وہ جانتے ہیں کہ ہندوستان اس اقدام کا خواہاں ہے ۔ دیگر بہت سے ممالک بھی ایسا ہی چاہتے ہیں ۔ اسی لےے ہمیں انتظار کرتے ہوئے دیکھنا ہوگا ۔ ہندوستانی نژاد امریکی ہیلی نے اس بات کااظہار کیا کہ پریس کانفرنس کے وقت ان کے ہمراہ قومی سلامتی مشیر لفٹننٹ جنرل ایچ آر میک ماسٹر بھی تھے ۔ انہوں نے آئندہ ہفتہ اقوام متحدہ میں امریکہ کی ترجیحات سے صحافیوں کو واقف کروایا ۔ میک ماسٹر نے بتایا کہ پیر کو صدر 120 سے زائد دیگر ممالک کے قائدین اور اقوام متحدہ کی سینئر قیادت سے جڑ جائیں گے تاکہ ادارہ کی اصلاح پر تبادلہ خیال کیاجاسکے ۔ میک ماسٹر نے بتایا کہ صدر اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انٹونیو گٹریس کی اصلاحات کی کوششوں کی تائید کریں گے ۔ بلا شبہ اقوام متحدہ میں اپنے بنیادی منصوبوں کو عملی جامہ پہنانے کی زبردست صلاحیت موجود ہے ۔ تاہم یہ اس صورت میں ہوسکتا ہے کہ جبکہ اسے زیادہ کارگزاری اور موثر انداز میں چلایا جائے ۔ جنوری میں ہیلی انتظامیہ میں شامل ہوئی تھیں جس کے بعد ان کی سفارتی مہارت کی ستائش کی گئی ۔ انہوں نے بتایا کہ صدر اقوام متحدہ اصلاح کو اجاگر کریں گے ۔ انہوں نے بتایا کہ یہ بات شدید اہمیت رکھتی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ امریکہ کے پاس ایک بڑا اصلاحی پیاکیج موجود ہے جبکہ اس کی قیادت سکریٹری جنرل کررہے ہیں اور جو حقیقی طور پر نہ صرف کاروائیوں کو بلکہ اپنی پیشرفت کے ساتھ بجٹ کو بھی بہتر بناسکتاہے اور اقوام متحدہ کو بہت زیادہ موثر بناسکتاہے ۔

 

جواب چھوڑیں