ہر شعبہ میں خواتین کو بااختیار بنانے کی ضرورت :وینکیانائیڈو

 نائب صدر جمہورےہ ایم وینکیا نائیڈو نے خواتین کو بااختیار بنانے کی ضرورت پر زور دیا ہے جو ملک کی جملہ آبادی کا نصف حصہ ہےں۔ معاشی، سیاسی اور ہر اےک شعبہ حیات میں بھی خواتین کو خود مختار بنانے کی ضرورت ہے ۔ انہوںنے کہا کہ خواتین کو پسماندہ بنا کر کوئی ملک ترقی نہیں کرسکتا ۔ شہر میں آج ودیا نگر علاقہ میں ریجنل ووکیشنل ٹریننگ انسٹیٹیوٹ ( آر وی ٹی آئی ) کا سنگ بنیاد رکھنے کے بعد نائب صدر جمہورےہ ایم وینکیا نائیڈو نے یاد دلایا کہ ویدک دور میں خواتین کا احترام کیا جاتا تھا ۔ ہندو مذہب کے مطابق لکشمی کو دولت‘ درگا کو طاقت واقتدار اور سرسوتی کو علم وہنر سےکھنے کی دیوی کہا جاتا ہے۔ زمانہ قدیم میں خواتین کا احترام کیا جاتا تھا لےکن موجودہ عصری زمانے میں ایسا نہیں کیا جارہا ہے۔ صنفی مساوات کا رجحان نہ ہونے کے نتیجہ میں آج خواتین میں ناخواندگی کی شرح زیادہ ہے ۔ ےہی سبب صنف نازک کو بااختیار بنانے کے عمل میں رکاوٹ ہے۔ انہوںنے کہا کہ ملک کی آزادی کے بعد تمام پیشرو حکومتوں نے اس خامی کے اصلاح کی کوشش کی اور لڑکے اور لڑکیوں سے ےکساں برتا و وسلوک کرنے کے بارے میں عوام کے اذہان کو تبدےل کرنے کی سعی کی ۔ تمام شعبہ حیات میں لڑکے اور لڑکیوں کو مساوی موقف دینے کی کوشش کی گئی ۔

جواب چھوڑیں