سوچی کے لئے فوجی کاروائی رکوانے کا آخری موقع: سکریٹری جنرل اقوام متحدہ

میانمار کی قائد آنگ سان سوچی کے لئے فوجی کاروائی رکوانے کا آخری موقع ہے جس کے نتیجہ میں ہزاروں روہنگیا مسلمانوں کو جان بچانے بنگلہ دیش بھاگنا پڑا ہے۔ اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انٹونیوگیٹرس نے یہ بات کہی۔ انہوں نے ہفتہ کی رات بی بی سی سے کہا کہ سوچی کے پاس تشدد رکوانے کا آخری موقع ہے۔ اگر انہوں نے صورتحال نہیں سدھاری تو میرے خیال میں المیہ ، دہشت ناک ہوجائے گا اور مجھے پتہ نہیں کہ مستقبل میں یہ کیسے ٹھیک ہوگا۔ سکریٹری جنرل نے اعادہ کیاکہ روہنگیاو¿ں کو ان کے ملک واپس ہونے دینا چاہئیے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ یہ واضح ہے کہ ملک میں میانمار کی فوج کی ہنوز بالادستی ہے۔ نوبل انعام یافتہ سوچی پر روہنگیا مسئلہ پر دنیابھر میں تنقید بڑھتی جارہی ہے۔ وہ نیویارک میں پیر کے دن سے شروع ہونے والے اقوام متحدہ سلامتی کونسل اجلاس میں شرکت نہیں کررہی ہیں۔ سکریٹری جنرل اقوام متحدہ کی وارننگ ایسے وقت آئی ہے جب بنگلہ دیش نے کہہ دیا ہے کہ وہ 4لاکھ سے زائد روہنگیاو¿ں کی نقل وحرکت محدود کررہا ہے۔

جواب چھوڑیں