نوی پیٹ کی ترقی کےلئے 300 کروڑخرچ کرنے کا منصوبہ:کے کویتا ایم پی کا دعویٰ

رکن پارلیمنٹ نظام آباد کے کویتا نے کہاکہ نوی پیٹ منڈل (ضلع نظام آباد ) میں ترقیاتی کاموں کی انجام دہی کے لئے 300 کروڑروپے خرچ کئے جائیں گے۔ آج نوی پیٹ میں پالی ٹیکنک کالج کی نئی عمارت کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ حکومت کی جانب سے فروغ تعلیم پرتوجہ مرکوز کی گئی ۔ اسکولس ‘کالجس کے لئے نئی عمارتیں تعمیر کی جارہی ہےں۔ تعلیمی اداروں میں بنیادی سہولتوں کی فراہمی ‘اساتذہ کی مخلوعہ جائیدادوں پر تقررات ‘ایس سی ‘ایس ٹی ‘اقلیتی طبقہ کے طلباءکو اعلیٰ تعلیم کے حصول کے لئے مالی مدد وحوصلہ افزائی کی جارہی ہے ۔ ملک کی تاریخ میں پہلی بار ایس سی ‘ایس ٹی ‘ بی سی اوراقلیتی طلباءکے لئے بڑے پیمانے پر رہائشی اقامتی اسکولس کاقیام عمل میں لایاگیا ۔ ڈپٹی چیف منسٹر ووزیر تعلیم کڈیم سری ہری نے کہاکہ حکومت‘ تلنگانہ کوتعلیم یافتہ اور خوشحال ریاست میں تبدیل کرنے کا عزم کئے ہوئے ہے ۔ اسی سلسلہ میں 522 اقامتی اسکولس قائم کئے گئے جہاں طلباءکومفت قیام وطعام کے ساتھ عالمی معیار کی تعلیم سے آراستہ کیا جارہاہے ۔ انہوںنے مقامی عوام کوتیقن دیا کہ نوی پیٹ میں جونیئر کالج کے قیام کے دیرینہ مطالبہ کوقبول کرتے ہوئے جونیئر کالج منظور کیاگیاہے جو آئندہ تعلیمی سال سے کارکرد ہوجائے گا۔ وزیر تعلیم نے کہاکہ ہماری توجہ ‘تعلیم کے ساتھ ساتھ طلباءکو حصول روزگار کے قابل بناناہے اور ہم اس ذمہ داری کو ادا کرنے کے پابند عہد ہے ۔ قبل ازیں ڈپٹی چیف منسٹر کے ہاتھوں پالی ٹیکنک کالج کی نئی عمارت کا افتتاح عمل میں آیا ۔ اس موقع پررکن اسمبلی بودھن محمدشکیل عامر ودیگر موجودتھے۔

جواب چھوڑیں