آصفہ کی عصمت ریزی و قتل کیس میں انصاف کیا جائے گا : محبوبہ مفتی

اس بات پر زور دیتے ہوئے کہ ملک کا قانون اعلیٰ ترین ہے اور آصفہ کی عصمت ریزی و قتل کیس میں انصاف کیا جائے گا۔ چیف منسٹر جموں و کشمیر محبوبہ مفتی نے کہا کہ تحقیقات کے طریقۂ کار پر کسی غلط فہمی کی گنجائش نہیں ہے۔ اتحادی شراکت دار پارٹی کا نام لیے بغیر کیس کی تحقیقات سنٹرل بیورو آف انوسٹیگیشن (سی بی آئی) کے ذریعہ کرانے بھارتیہ جنتا پارٹی کے مطالبہ پر محبوبہ مفتی نے کہا کہ بعض افراد کٹھوا کیس کی تحقیقات کے طریقۂ کار پر شبہات پیدا کررہے ہیں۔ کیس کی تحقیقات ریاست کی اعلیٰ ترین عدالت کی نگرانی میں انتہائی قابل پولیس عہدیدار کررہے ہیں۔ ملک کا قانون اعلیٰ ترین ہے اور انصاف کی جیت ہوگی ۔ مخلوط حکومت کے دو وزراء کے بشمول بی جے پی کے کئی سینئر لیڈروں نے جموں و کشمیر پولیس کے کرائم برانچ (سی بی ) پر عدمِ اعتماد کا الزام عائد کرتے ہوئے سی بی آئی تحقیقات کرانے ہندو یکتا منچ کے مطالبہ کی کھلے عام تائید کیا ہے۔ وزیر اعظم کے آفس سے وابستہ مرکزی وزیر ڈاکٹر جتیندر سنگھ نے بھی کہا کہ حکومت مقامی افراد کے مطالبہ کی بھی سماعت کرے جو سی بی آئی تحقیقات کا مطالبہ کررہے ہیں، تاہم پی ڈی پی لیڈروں نے سی بی آئی تحقیقات کے مطالبہ کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ ہائیکورٹ کی زیرنگرانی کرائم برانچ کی تحقیقات صحیح رخ پر جاری ہیں۔ اصل اپوزیشن نیشنل کانگریس اور علیحدگی پسندوں نے جرم میں ملوث افراد کی تائید میں ترنگہ جھنڈوں کے ساتھ یکتا منچ اور بی جے پی کے جلوسوں پر تنقید کی ۔ سی بی نے حال ہی میں تحقیقات کی ایک رپورٹ ہائی کورٹ میں داخل کی ہے۔ آصفہ کی گمشدگی کے ایک ہفتہ بعد اس کی نعش کٹھوا سے برآمد کی گئی جس کا عصمت ریزی کے بعد قتل کیا گیا تھا۔ سی بی نے ایک اسپیشل پولیس آفیسر (ایس پی او) اور دیگر دو پولیس ملازمین کو اس سلسلے میں گرفتار کیا ۔ مقامی افراد ہندو منچ کے بیانر تلے تقریباً روزانہ سی بی آئی تحقیقات کا مطالبہ کرتے ہوئے جلوس نکال رہے ہیں۔

جواب چھوڑیں