جموں وکشمیر کے وزیر فینانس حسیب درابو برطرف

 چیف منسٹر جموں و کشمیر محبوبہ مفتی نے پیر کے دن سینئر پی ڈی پی قائد اور وزیر فینانس حسیب درابو کو ریاست کے تعلق سے ان کے متنازعہ ریمارکس پر اپنی مجلس وزرا سے ہٹادینے کا فیصلہ کیا۔ چیف منسٹر نے گورنر این این وورا کو اس سلسلہ میں لکھا۔ محبوبہ مفتی کے قریبی ذرائع نے آئی اے این ایس کو یہ بات بتائی۔ درابو نے یہ کہتے ہوئے ہنگامہ برپا کردیا تھا کہ جموں و کشمیر نہ تو سیاسی مسئلہ ہے اور نہ ہی اس ریاست میں کوئی جنگ جاری ہے۔ پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی نے اتوار کے دن درابو سے ان کا موقف واضح کرنے کے لئے کہا تھا۔ درابو نے نئی دہلی میں 9 مارچ کو پی ایچ ڈی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے زیراہتمام تقریب میں یہ بات کہی تھی ۔ پارٹی نے کہا کہ ان کا یہ بیان پارٹی کے موقف کی نفی ہے۔ قومی دھارا کی جماعتوں اور علیحدگی پسند پارٹیوں نے درابو کے ریمارکس کے لئے پی ڈی پی پر تنقید کی تھی۔ انہوں نے کہا تھا کہ یہ بیان برسراقتدار رہنے ریاست کو فروخت کردینے کے مترادف ہے۔ پی ڈی پی نے تاہم اتوار کے دن کہا کہ وہ ریاست کو سیاسی مسئلہ مانتی ہے۔ وہ اپنے قیام کے بعد سے اس مسئلہ کی صلح صفائی اور بات چیت کے ذریعہ یکسوئی پر اندرونی و بیرونی سطح پر انتھک کوشش کررہی ہے۔ غور طلب ہے کہ درابو ‘ پی ڈی پی کے وہ اہم قائد تھے جنہوں نے بی جے پی کے ساتھ پی ڈی پی کے اتحاد کے ایجنڈہ کا مسودہ تیار کیا تھا۔

جواب چھوڑیں