ہائپر سونک میزائل کا کامیاب روسی تجربہ

 میزائل کے کامیاب تجربے کا دعویٰ کیا ہے جبکہ صدر ولادیمیر پوٹین نے میزائل کو ’آئیڈیل ہتھیار‘ قرار دے دیا۔واضح رہے کہ روسی صدر نے رواں ماہ کے آغاز میں ہتھیاروں کی ایک نئی جنریشن تیار کرنے کا انکشاف کیا تھا۔فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق روس کی وزارت دفاع نے بتایا کہ فضاء سے مار کرنے والے نئے چھوٹے میزائل سسٹم کِنزال (خنجر) میزائل ایم آئی جی 31 سپرسونک انٹرسیپٹر جیٹ سے داغا گیا۔وزارت دفاع نے دعویٰ کیا کہ ’ہائپر سونک میزائل مقررہ وقت میں مذکورہ فاصلہ طے کرکے ہدف کو نشانہ بنانے میں کامیاب رہا‘۔اس ضمن میں روس کی وزارت دفاع نے میزائل فائر کرنے کی ویڈیو بھی جاری کی۔واضح رہے کہ روس کے صدر ولادیمیر پوٹین نے قوم سے اپنے سالانہ خطاب میں جدید ہائپر سونک میزائل کے بارے میں انکشاف کیا تھا جبکہ 18 مارچ کو ہونے والے صدراتی انتخابات میں ولادی میر پوٹن کی کامیابی کے امکان روشن ہیں۔ولادیمیر پوٹین نے دعویٰ کیا تھا کہ ہائپر سونک میزائل سسٹم آواز سے 10 گنا زیادہ تیزی سے پرواز کر سکتا ہے، جس کے باعث یہ فضائی دفاعی نظام اور میزائل دفاعی نظام کے مقابلے میں ناقابل تسخیر ہے، جس کا کوئی ملک موازنہ نہیں کر سکتا۔انہوں نے مزید کہا کہ میزائل جنوبی ملٹری ضلع میں یکم دسمبر کو نصب کیا گیا۔دوسری جانب نائب وزیراعظم نے سوشل میڈیا فیس بک پر کہا کہ ایم آئی جی 31 سپرسونک جیٹ کو ’جدید‘ بنانے کا کام مکمل ہو چکا جو میزائل کو باآسانی اٹھانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

جواب چھوڑیں