آدھار سے کسی بھی چیز کونہیں جوڑوںگا : عمر عبداللہ

 سپریم کورٹ کی جانب سے آدھار کو بینک کھاتوں اور موبائل فونس سے جوڑنے کی تاریخ میں قطعی فیصلہ صادر کیے جانے تک غیرمعینہ توسیع کے ساتھ ہی جموں و کشمیر کے سابق چیف منسٹر عمر عبداللہ نے کہا کہ وہ اس وقت تک کسی بھی چیز کو آدھار سے مربوط نہیں کریںگے جب تک کہ ایسا کرنا قطعی ضروری نہ ہوجائے ۔ عمر عبداللہ نے جو نیشنل کانفرنس کے کارگذار صدر بھی ہیں ، بینکوں اور سیلولر کمپنیوں سے کہا کہ وہ انہیں ای میلس اور پیامات روانہ کرنا بند کریں ۔ عمر عبداللہ نے کہا عزیز ایچ ڈی ایف سی ، ایر ٹیل اور دیگر براہِ کرم مجھ پر ای میلس اور پیامات کی بھرمار نہ کریں ۔ میں اس وقت تک کسی بھی چیز کو آدھار سے مربوط نہیں کروںگا جب تک کہ ایسا کرنا قطعی ضروری نہ ہوجائے گا۔ واضح رہے کہ چیف جسٹس آف انڈیا دیپک مشرا کی زیرصدارت سپریم کورٹ کی ایک پانچ رکنی دستوری بنچ نے کل کہا تھا کہ حکومت اس بات پر اصرار نہیں کرسکتی کہ بینک کھاتے چلانے ، فون کنکشن رکھنے یا تتکال پاسپورٹ کے لیے درخواست دینے شہری اسے آدھار تفصیلات پیش کریں۔

جواب چھوڑیں