ریاست میں10 ہزار کی آبادی پر ایک بستی دواخانہ کا قیام

حکومت تلنگانہ نے ہیلت کئیرسیکٹر پر خصوصی توجہ دیتے ہوئے رواں سال سے عوام کی دہلیز تک طبی سہولتوں کو فراہم کرنے کیلئے مختلف پروگراموں کو روبہ عمل لانے کا اعلان کیا ہے۔ حکومت نے عوام بالخصوص سلم علاقوں کے افراد کو خصوصی طبی سہولتوں کی فراہمی کے ساتھ ساتھ آئی کیمپس منعقد کرنے کا بھی فیصلہ کیا ہے۔ اس حصہ کے طور پر ریاستی وزیر صحت ڈاکٹر سی لکشما ریڈی نے ریاستی وزیر بلدی نظم ونسق و شہری ترقیات کے ٹی آر کے ساتھ جمعہ کے روز جی ایچ ایم سی حدود میں بی جے آر نگر ، گڈی انارم، فلک نما اور دیگر مقامات پر ’’ بستی دوا خانہ اسکیم‘‘ کا آغاز کیا ہے ۔ شہر میں40 بستی دواخانوں کے تعمیری کام جاری ہیں اور مرحلہ وار انداز میں شہر بھر میں مزید ایک ہزار بستی دواخانے تعمیر کرنے کا منصوبہ ہے ۔ ریاست بھر میں 10 ہزار آبادی پرایک بستی دواخانہ قائم کیا جائے گا۔ وزیر کے ٹی آر نے اس بات کا انکشاف کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے تعلیم کے ساتھ ہیلت سیکٹر کو بھی خصوصی اہمیت دے رکھی ہے ۔ انہوںنے کہا کہ حکومت، عوام کو بہتر سے بہتر طبی سہولتیں فراہم کرتے ہوئے ملک کی دیگر ریاستوں کیلئے ایک مثال قائم کرنا چاہتی ہے ۔ کے ٹی آر نے کہا کہ ان بستی دواخانوں میں چھوٹے امراض کا اعلان کیا جائے گا‘ اور عوام کے ہیلت پروفائل کو محفوظ رکھا جائے گا ۔ کسی مریض کو خصوصی علاج کی ضرورت محسوس ہونے پر اسے جنرل ہاسپٹلس سے رجوع کیا جائے گا۔ انہوںنے کہا کہ بہت جلد ریاست بھر میں آئی کیمپس کا انعقاد عمل میں لایا جائے گا ۔ ان کیمپوں میں مریضوں میں عینکیں مفت تقسیم کی جائیں گی ۔ ایک بستی دواخانہ میں کے ٹی آر نے اپنا بی پی چک کرایا اور اپنی زخمی انگلی پر بانڈیج ( پٹی ) لگوائی ۔

جواب چھوڑیں