روس کا امریکی پابندیوں کاجواب مستحکم انداز میں دینے کا فیصلہ

روس نے کہا کہ وہ اپنے کاروباریوں، کمپنیوں اور سرکاری حکام کے خلاف لگائء گئی نئی امریکی پابندیوں کا مستحکم انداز میں جواب دے گا۔روسی وزارت خارجہ نے ایک بیان جاری کرکے کہا کہ اس قسم کا دباؤ روسی شہریوں کو راستے تبدیل کرنے پر مجبور نہیں کر سکتا اور یہ پابندیاں روسی سماج کو مزیدمتحد کرے گا۔امریکہ نے سال 2016 میں ہوئے صدارتی انتخابات میں ثالثی کرنے سمیت مختلف سرگرمیوں کے لئے روس کو سزا دینے کے لئے کل صبح ہی نئی پابندی لگانے کا فیصلہ کیا ہے۔بتایا جاتا ہے کہ امریکہ نے روس کے صدر ولادیمیر پوٹن کے سات قریب ترین افراد اور 17 سینئر سرکاری حکام سمیت کئی کمپنیوں پر پابندی لگانے کا فیصلہ کیا ہے۔ ان سبھی پر ’پوری دنیا میں خطرناک سرگرمیاں چلانے‘ کا الزام لگایا گیا ہے۔ امریکہ نے روس کے اعلی طبقے سے متعلق 12 کمپنیوں، سرکاری ہتھیار برآمداتی کمپنی اور ایک بینک پر بھی پابندی لگائی ہے۔تازہ فیصلے میں امریکہ نے جن لوگوں کے خلاف پابندی لگائی ہے، ان میں پوٹین کے باڈی گارڈ، ان کے داماد، صدر کے قریبی ساتھی اور ان کے کنٹرول والی کئی کمپنیاں شامل ہیں۔

جواب چھوڑیں