سلمان کو قید: مہیش منجریکر کا بیان

اداکار فلمساز مہیش منجریکر نے کہا ہے کہ ہر شخص سے کبھی نہ کبھی کوئی غلطی ہوا کرتی ہے لیکن جہاں تک سوپر اسٹار دوست سلمان خان کا تعلق ہے انہوں نے جو کچھ کیا ہے اس کی انہیں سزا دی جارہی ہے۔ جمعرات کو جودھپور کورٹ نے سلمان خان کو 5سال جیل کی سزا سنائی ہے۔ ان پر الزام ہے کہ دو سیاہ ہرنوں کو ہلاک کردیا۔ یہ واقعہ اکتوبر 1998میں اس وقت پیش آیا جبکہ وہ فلم ’’ہم ساتھ ساتھ ہیں‘‘ کی شوٹنگ میں مصروف تھے۔ عدالت نے ان کے معاون اسٹار سیف علی خان‘ تبو‘ نیلم اور سونالی بیندرے کو بری کردیا۔ اداکار فلمساز مہیش نے سلمان کو دی گئی سزا کے تعلق سے کہا ہے کہ وہ اس سلسلہ میں مزید کچھ کہنا نہیں چاہتے کیونکہ بعض اوقات غیر ارادی طور پر غلطی ہوجاتی ہے۔ سلمان کو چاہیئے تھا کہ وہ قانونی امور کو پیش نظر رکھتے ہوئے کام کریں۔ فلمساز اداکار نے خبررساں پی ٹی آئی کے نمائندہ کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے یہ بات بتائی اور کہا کہ انہوں نے سلمان کے ساتھ وانٹیڈ‘ دبنگ‘ ریڈی اور جئے ہو کے علاوہ دوسری فلموں میں کام کرچکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سلمان ان کے ایک گہرے دوست ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سلمان کے کیس کے تعلق سے مختلف افراد مجھ سے اظہار خیال کرنے کو کہتے ہیں اور میں یہ چاہتا ہوں کہ سلمان کو کل رہا کردیا جائے کیونکہ وہ ایسے شخص تو نہیں ہیں کہ جنہیں جیل کی سزا بھگتنی پڑے لیکن یہ ایک اتفاق ہے کہ انہوں نے دو کالے ہرن کو ہلاک کرکے قانون کی خلاف ورزی کی ہے۔ مہیش نے مزید کہا ہے کہ کئی افراد جانوروں کا شکار کرتے ہیں لیکن بعض اوقات قانونی امور کو پیش نظر رکھنا پڑتا ہے۔ جنوبی افریقہ اور بعض دوسرے ممالک میں جانوروں کا شکار کیا جاسکتا ہے لیکن ہمارے ملک میں جانوروں کے شکار کے تعلق سے قوانین بنائے گئے ہیں جس کو پیش نظر رکھنا ضروری ہوتا ہے۔ منجریکر نے تاحال سلمان خان کے خاندان سے ملاقات نہیں کی۔ ان کا یہ احساس ہے کہ یہ وقت سلمان خان کے خاندان سے ملاقات کرکے عدالت کے فیصلہ کے تعلق سے بات چیت کرنا مناسب نہیں۔ انہوں نے کہا کہ کچھ وقت کے بعد ممکن ہے کہ میں سلمان کے خاندان سے ملاقات کروں کیونکہ سلمان کے ساتھ میری گہری دوستی ہے۔ ان کے خاندان سے ملاقات کرکے انہیں تسلی دینے کی کوشش کروں گا۔

جواب چھوڑیں