اندرانی مکرجی دواخانہ سے ڈسچارج

 سابق میڈیا ایگزیکٹیو اندرانی مکرجی جسے اپنی بیٹی شینا بورا کے قتل کے سلسلے میں گرفتار کیا گیا تھا، کو آج جے جے پاسپٹل سے ڈسچارج کرکے دوبارہ بائیکولا جیل منتقل کردیاگیا۔انسپکٹر جنرل (محابس) راج وردھن سنہا نے پی ٹی آئی کو بتایاکہ مکرجی جسے دوائی کی حد سے زیادہ مقدارلینے پر سرکاری جے جے ہاسپٹل شریک کرایا گیا تھا کو جیل واپس لالیا گیا۔ ہاسپٹل کے ڈین ڈاکٹر ایس ڈی نندکار نے کہا کہ ’’اس کی حالت اب بہتر ہے۔‘‘46سالہ مکرجی کو 6؍ اپریل کو دواخانہ میں شریک کرایا گیا تھا جہاں وہ جنوبی ممبئی کی بائیکولہ جیل میں اپنے سیل سے نیم بے ہوشی کی حالت میں لائی گئی تھی۔ اس کے کئی معائنے کرائے گئے ۔ اس کے قارورے کے نمونوں کو جانچ کے لیے فارنسک لیباریٹری بھیجا گیا تھا اور رپورٹ ملنے پر دواخانہ کے حکام نے کہا کہ اس نے مایوسی دور کرنے کی وہ دوا حد سے زیادہ مقدار میں لی جسے ڈاکٹروں نے تجویز نہیں کیا تھا۔ قارورہ کے نمونے کی رپورٹ میں بینزوڈائزیپائن کی حد سے زیادہ مقدار پائی گئی۔ ریاستی محکمہ محابس قبل ازیں جیل میں مکرجی کے علیل ہونے کے معاملے کی تحقیقات کا حکم دے چکے ہیں۔ آئی جی (محابس) انکوائری مکمل ہونے کے بعد محکمہ کو رپورٹ پیش کریں گے۔ آئی این ایکس میڈیا کی شریک بانی مکرجی اپنی بیٹی شینا بورا قتل کس کی اصل ملزمہ ہے۔ 25سالہ بورا کو اپریل2012ء میں قتل کرکے رائے گڑھ ضلع کے جنگل میں پھینک دیا گیا تھا۔ قتل کے سلسلے میں مکرجی، اس کے سابق شوہر سنجیو کھنہ اور ڈرائیور شیام ور رائے کو گرفتار کیا گیا۔ رائے وعدہ معاف گواہ بن چکا ہے۔

جواب چھوڑیں