تاج محل کی ملکیت کا مسئلہ‘ شاہجہاں کی دستخط دکھانے سپریم کورٹ کی ہدایت

 سپریم کورٹ نے اترپردیش سنی وقف بورڈ سے کہا ہے کہ وہ تاج محل پر اپنے دعویٰ کے ثبوت میں شاہجہاں کے دستخط کردہ کاغذات دکھائے ۔ جسٹس دیپک مشرا کی زیرقیادت بنچ نے بورڈ کے وکیل سے کہا کہ اپنی بیگم ممتاز محل کی یاد میں 1631 میں تاج محل بنانے والے شاہجہاں نے بورڈ کے حق میں وقف نامہ لکھ کر دیا ہو تو دستاویز دکھائی جائیں۔ بنچ نے پوچھا کہ ہندوستان میں کون یقین کرے گا کہ تاج وقف بورڈ کا ہے۔ بورڈ کے وکیل نے کہا کہ شاہجہاں نے خود تاج محل کو وقف کیا تھا ۔اس پر بنچ نے بورڈ سے کہا کہ کاغذات دکھائیے۔ چیف جسٹس آف انڈیا نے بورڈ کے وکیل سے کہا کہ شاہجہاں کی دستخط دکھائیے ۔ اس پر بورڈ کے وکیل نے دستاویز داخل کرنے وقت مانگا۔ عدالت تاریخی عمارت کی ملکیت پر سال 2010میں دائر محکمہ آثار قدیمہ کی اپیل کی سماعت کررہی ہے۔

جواب چھوڑیں