ٹاملناڈو کے کارکنوں نے مودی کو سیاہ جھنڈیاں دکھائیں

 ٹامل تنظیم کے حامی ارکان نے کاویری آبی مسئلہ کے سلسلہ میں احتجاج کرتے ہوئے آج وزیر اعظم نریندرمودی کو سیاہ جھنڈیاں اس وقت دکھایا جب وہ ہندوستان کے سب سے بڑی ڈیفنس نمائش کا یعنی ڈیفکس شو کا افتتاح کرنے کیلئے تھروویدنتھائی کو پہنچے جو یہاں سے 40 کلو میٹر کے فاصلہ پر ہے۔ ٹی وائی کے تنظیم جو ٹامل تنظیم کی حامی ہے اور منی تھانیا جننا یاگیا کاٹچی جس کی قیادت ایم ایل اے ٹی انصاری ان لوگوں میں شامل تھے جب تنظیم نے چینائی ایرپورٹ پر احتجاج کیا۔ سینئر فلم ڈائرکٹر بھرت راج اور فلمساز امیر بھی ایرپورٹ کی عمارت میں احتجاج کرنے والوں میں شامل تھے۔ انہوںنے نعرے بھی بلند کئے۔ پولیس نے احتجاجیوں کو منشر کردیا۔ احتجاج کو مد نظر رکھتے ہوئے ٹریفک کو روک دیا گیا۔ سیاہ پرچم ڈی ایم کے سربراہ ایم کرونا ندھی اور پارٹی کاگذار صدر ایم کے اسٹالن کی قیامگاہوں پر لہرائے گئے ۔ راجیہ سبھا ایم پی کنی موزی اور دیگر قائدین نے بھی مودی کے دورہ کیخلاف احتجاج کیا کیونکہ وہ کاویری مینجمنٹ بورڈ تشکیل نہیں دے رہے ہیں۔ ضلع ایروڈ میں ڈی ایم کے کارکنوں نے سیاہ غباروں کو اڑایا۔ اس موقع پر تقریباً50ورکس کو حراست میں لے لیا گیا۔ بعض اپوزیشن پارٹیاں اور تعمیری تنظیم کے حامیوں نے کل کہا تھا کہ وہ مودی کے دورہ ٹاملناڈو کیخلاف سیاہ جھنڈیوں سے احتجاج کریں گے۔

جواب چھوڑیں