دونوں شہروں میں شب معراج النبیؐ کا خشوع و خضوع کے ساتھ اہتمام

دونوں شہروں حیدرآباد و سکندرآباد میں شب معراج النبیؐ کا خشوع و خضوع کے ساتھ اہتمام کیا گیا۔ مساجد میں خصوصی عبادتیں ‘ تلاوت قرآن‘ ذکرو اذکار اور واعظ و بیان کے جلسے منعقد ہوئے۔ شب معراج النبیؐ کا سب سے بڑا اجتماع تاریخی مکہ مسجد میں دیکھا گیاجہاں امام مکہ مسجد حافظ محمد عثمان نقشبندی نے نماز عشاء کی امامت کی۔ مصلیوں سے مسجد کا اندرونی و بیرونی حصہ بھرچکا تھا۔ بعد ازاں رات بھر سنتوں اور نفل نمازوں کا اہتمام کیا گیا۔ جامع مسجد چوک میں بعد نماز عشاء امارات ملت اسلامیہ کے زیر اہتمام جلسہ فضائل شب معراج النبیؐ منعقد کیا گیا۔ مولانا محمد حسام الدین ثانی عاقل جعفر پاشاہ نے معراج النبیؐ کے فضائل بیان کئے۔ جلسہ کا آغاز قاری عبدالقیوم شاکر کی قرأت کلام پاک سے ہوا۔ شاہی مسجد باغ عامہ جامع مسجد افضل گنج ‘ جامع مسجد صیحفہ اعظم پورہ ‘ جامع مسجد وزیر علی فتح دروازہ ‘ جامع مسجد ملے پلی ‘ جامع مسجد خیریت آباد‘ جامع مسجد عزیزیہ مہدی پٹنم ‘ جامع مسجد عثمانیہ صرفخاص پلٹن ملک ‘پیٹ ‘ جامع مسجد مشیر آباد ‘ جامع مسجد چلکل گوڑہ سکندرآباد ‘ جامع مسجد بارکس کے علاوہ شہر کی دیگر مساجد میں فضائل معراج النبیؐ کے موضوع پر جلسے منعقد ہوئے۔ کل ہند بزم رحمت عالم کے زیر اہتمام بعد نماز عشاء قلی قطب شاہ اسٹیڈیم میں نواں سالانہ مرکزی جلسہ معراج النبیؐ منعقد کیا گیا۔ جلسہ کو مہمان عالم دین مفتی سرتاج احمد رضوی (مرادآباد) ‘ مولانا حافظ توصیب رضا ربانی (چینائی) کے علاوہ شہر کے ممتاز علماء کرام نے معراج النبیؐ واقعہ پر تفصیلی روشنی ڈالی اور عامۃ المسلمین کو قرآن و سنت کی روشنی میں زندگی گذارنے اور نمازوں کی پابندی کرنے کی تلقین کی۔ ابوالحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر کی جانب سے شہر کے مختلف مساجد پھول باغ‘ جہاں نما‘ جامع مسجد عنبر پیٹ ‘ مسجد ابن صاحب علاقہ داور جنگ ‘ مولا علی کمان‘ مسجد اسماعیل پٹیل علی باغ کالے پتھر‘ مسجد خضریٰ شاہین نگر‘ مسجد قادرالدولہ کوٹلہ علیجاہ ‘ جامع مسجد حیات بخش بیگم حیات نگر و دیگر مساجد میں جلسہ فضائل معراج النبیؐ منعقد کئے گئے۔ جس کو مولانا مفتی حافظ ضیاء الدین نقشبندی شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ ‘ مولانا حافظ محمد سعد الدین نقشبندی ‘ مولانا محمد مصباح الدین عمیر نقشبندی ‘ مولانا شیخ محی الدین رفیع نقشبندی‘ مولانا سید محمد بہاء الدین زبیر نقشبندی و دیگر مہمانوں نے خطاب کیا۔ کل ہند مجلس تعمیر ملت کے زِیر اہتمام مسجد گلشن خلیل مانصاحب ٹینک ‘ مسجد محمدیہ اولڈ بوئن پلی ‘ مسجد اعظم جاہی سیتارام پیٹ منگل ہاٹ ‘ مسجد قطب شاہی مولا علی میں جلسہ ہائے شب معراج النبیؐ منعقد کئے گئے۔ ان جلسوں کو محمد ضیاء الدین نیر‘ عمر احمد شفیق و دیگر نے خطاب کیا۔دونوںشہروں کی مختلف مساجدکو برقی قمقموں سے سجایاگیا۔ پرانے شہر میں رات بھر فرزندان توحید جاگتے ہوئے جہاں عبادتوں کا اہتمام کیا وہیں بعض نوجوان سڑکوں‘ ہوٹلوں اور بازاروں میں وقت گزاری کرتے ہوئے دیکھے گئے ہیں۔ پولیس نے حادثات کی روک تھام کیلئے شہر کے تمام فلائی اوور کو 10 بجے رات سے ٹریفک کیلئے بند کردیا تھا اور پرانے شہر کے پٹرول پمپس بھی بند کردیئے گئے تھے اور جگہ جگہ سیکوریٹی کا وسیع تر بندوبست کیا گیا تھا۔

جواب چھوڑیں