عوام کے کھانے پینے کا فیصلہ حکمراں نہ کریں : سسوڈیا

 دہلی کے ڈپٹی چیف منسٹر منیش سسوڈیا نے کہا ہے کہ حکمرانوں کا نہیں بلکہ عوام کو یہ طے کرنا چاہیے کہ وہ کیا کھائیں اور پئیںگے ۔ انہوںنے الزام عائد کیا کہ ’’نظام‘‘ (حکومت) اب عوام کی سوچ پر بھی پابندی عائد کردینا چاہتا ہے۔ سسوڈیا نے جو وزیر برائے آرٹ ، کلچر اور زبانیں بھی ہیں، کل رات سالانہ جشن بہار مشاعرہ میں تقریر کرتے ہوئے یہ تبصرہ کیا ۔ انہوں نے یہاں بیسویں جشن بہار مشاعرہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم بڑی بہادر قوم ہیں ، جوایک ایسے وقت جشن اور بہار کی بات کررہے ہیں جب برسراقتدار افراد عوام کے کھانے اور پینے پر بھی پابندی عائد کردینا چاہتی ہیں۔ نظام کو اس بات کا فیصلہ نہیں کرنا چاہیے کہ عوام کیا کھائیں اور پئیں ۔ میرے فریج میں کیا رکھا ہوا یا پھر کسی کے باورچی خانہ میں کیا پک رہا ہے۔ ملک اور عوام کو ہی اس کا فیصلہ کرنا چاہیے۔

جواب چھوڑیں