گولڈ میڈل جیتنے والی پونم یادو پر وارانسی میں حملہ

وارانسی کے روہنیا علاقے میں ہفتہ کو 21 ویں دولت مشترکہ کھیلوں میں گولڈ میڈل جیتنے والی ویٹ لیفٹر پونم یادو پر حملہ ہوا۔ حملے کے بعد پونم نے اس کی اطلاع پولس کو دی۔ معاملہ سامنے آنے کے بعد محکمہ پولیس میں بے چینی پیدا ہوگئی ہے۔ اطلاع ملتے ہی موقع پر پہنچی پولیس نے تحقیقات شروع کردی ہے۔ پولیس کے مطابق حملے میں پونم یادو کو کوئی چوٹ نہیں آئی۔ یہ واقعہ منگوار گاوں کا ہے۔ حملہ اس وقت ہوا جب پونم منگوار میں اپنی بہن سے ملنے گئی تھیں۔ پونم یادو اور ان کے رشتہ داروں پر گاوں کے پردھان اور اس کے حامیوں نے حملہ کردیا۔ پونم اور رشتہ داروں نے بھاگ کر اپنی جان بچائی۔ دریں اثنا گاوں کے پردھان اور اس کے حامیوں نے گاڑیوں میں توڑ پھوڑ کی اور نقصان پہنچایا۔ پولیس کے مطابق پونم آج صبح اپنے والد کے ساتھ بنارس میں اپنی بوا کے گھر گئی تھیں۔ بوا کا گائوں پردھان سے پہلے سے زمینی تنازعہ چل رہاہے۔ جب پونم وہاں پہنچیں تب بھی وہاں کسی بات پر تنازعہ ہوگیا۔ معاملہ رفع دفع کرانے آنے والی پونم پر پڑوسیوں نے بھی حملہ کردیا۔ بتایا جا رہاہے کہ صبح میں پونم کی بوا اور پڑوسیوں کے درمیان جھگڑا ہوا تھا۔ اسی دوپہر میں پونم کے پہنچنے پر مارپیٹ ہوگئی۔ پونم کی بہن نے بتایاکہ پردھان اور پڑوسیوں نے مل کر ان پر حملہ کیا۔ اسی دوران جب پونم نے معاملہ رفع دفع کرنا چاہا تو مقامی لوگوں نے انہیں بھی تشدد کا نشانہ بنایا۔ یہ بھی کہاجا رہاہے کہ دونوں خاندان کے درمیان یہ تنازعات طویل عرصہ سے چل رہاہے۔ فی الحال حملے کے بعد پونم وارانسی کیلئے روانہ ہوچکی ہیں۔ پونم کی بوا کی طرف سے پولیس میں گرام پردھان اور اس کے حامیوں کے خلاف شکایت درج کرائی گئی ہے۔ پولس معاملہ کی تفتیش کررہی ہے۔ واضح رہے کہ گذشتہ جمعہ کو دولت مشترکہ کھیلوں میں گولڈ میڈل جیتنے کے بعد پونم یادو وارانسی پہنچیں جہاں ایر پورٹ پر ان کا والہانہ استقبال کیا گیا تھا۔ اس موقع پر پونم کے اہل خانہ اور رشتہ دور استقبال کیلئے موجود تھے۔ گولڈ میڈل جیت کر ملک کا نام بلند کرنے والی کاشی کی بیٹی پونم یادو کا استقبال کرنے کیلئے سینکڑوں کی تعداد میں لوگ ایئر پورٹ پر موجود تھے۔ اس دوران بابت پور ایئر پورٹ سے لے کر داندو پور تک جگہ جگہ مختلف تنظیموں کی جانب سے بنارس کی بیٹی کا استقبال کیاگیا۔

جواب چھوڑیں