آئندہ انتخابات ، ٹی جے ایس تمام نشستوں سے مقابلہ کرے گی:پروفیسر کودنڈا رام

تلنگانہ جوائنٹ ایکشن کمیٹی ( جے اے سی ) نے جس نے حالیہ دنوں میں ایک سیاسی جماعت تشکیل دی ہے ، کہا کہ نئی سیاسی پارٹی تلنگانہ جنا سمیتی،2019 کے انتخابات میں ریاست کی تمام لوک سبھا اور اسمبلی نشستوں سے الیکشن لڑے گی ۔ جے اے سی نے مزید بتایا کہ ٹی جے ایس ( تلنگانہ جنا سمیتی) کسی سے مفاہمت نہیں کرے گی اور وہ تنہا، اسمبلی اور لوک سبھا کی تمام نشستوں سے انتخاب لڑے گی ۔ جے اے سی کے صدرنشین پروفیسر کودنڈار ام نے جنہوں نے تلنگانہ جنا سمیتی قائم کی ہے کہا کہ تمام نشستوں سے مقابلہ کرنے کا ہم منصوبہ رکھتے ہیں ۔ تلنگانہ میں آئندہ سال2019 میں اسمبلی اور لوک سبھا کے انتخابات ایک ساتھ منعقد ہوں گے ۔ یہ پوچھے جانے پر کہ آیا آئندہ انتخابات کیلئے پارٹی کو تیاری کے لئے مناسب وقت دستیاب رہے گا ، تو انہوںنے کہا کہ ہمیں ، جے اے سی سے کافی فائدہ یہ ہے کہ دیگر افراد کے مقابل جو سیاست میں داخل ہوئے ہیں، وہ سماجی سرگرمیوں میں زیادہ سرگرم ہیں۔ ہم گذشتہ چند برسوں سے سیول سوسائٹی کے گروپوں میں کافی سرگرم ہیں۔ اس کے علاوہ ہم علحدہ تلنگانہ تحریک میں بھی بہت زیادہ سرگرم رہ چکے ہیں۔ اس طرح ہمارا ایک نیٹ ورک ہے اور ہم عوام کو درپیش مسائل سے واقفیت رکھتے ہیں۔ پروفیسر کو دنڈا رام نے کہا کہ 2019 کے انتخابات میں ٹی جے ایس ، کسی دوسری جماعت سے مفاہمت نہیں کرے گی ۔ ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے انہوںنے کہاکہ ہاں! ہم کسی دوسری جماعت سے انتخابی مفاہمت نہیں کریں گے ۔ جے اے سی نے جو مختلف سیاسی اور سماجی تنظیموں پر مشتمل ہے ، علحدہ ریاست تلنگانہ کے قیام کیلئے زبردست تحریک چلائی تھی۔ حکمراں ٹی آر ایس، کے علاوہ کانگریس اور دیگر سیاسی جماعتیں، بھی اس جے اے سی کا حصہ ہیں۔ 2 جون2014 کو تشکیل تلنگانہ کے بعد جے اے سی نے سیول سوسائٹی گروپ کے طور پر اپنا وجود کو برقرار رکھا ہے ۔ جے اے سی نے عوامی مسائل پر احتجاج منظم کرنے کے سلسلہ کو جاری رکھا ہے ۔ انہوںنے کہا کہ سیاسی قیادت کی جانب سے عوامی مسائل کو حل کرنے میں سنجیدگی کا رویہ نہ دکھائے جانے پر جے اے سی نے نئی سیاسی جماعت تشکیل دینے کا فیصلہ کیا ہے ۔ پروفیسر کودنڈا رام نے کہا کہ ہماری ریاست میں برسراقتدار جماعت کا رویہ آمریت پسندانہ ہے اس لئے ہم نے نئی سیاسی جماعت کی تشکیل کے بارے میں غور و فکر کیا تاکہ مقاصد کو حاصل کرنے کیلئے ہم اپنا آگے کا سفر جاری رکھ سکیں۔ جاریہ ماہ کے اوائیل میں پروفیسر کودنڈا رام نے نئی تشکیل شدہ جماعت تلنگانہ جنا سمیتی کے پرچم کی رسم کشائی انجام دی تھی ۔

جواب چھوڑیں