عرب لیگ سمٹ کا افتتاح‘ شاہ سلمان کاخطاب

سعودی عرب کے فرماں روا شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر ظہران میں عرب لیگ کے سربراہ اجلاس کی میزبانی پر مملکت کی جانب سے خوشی کا اظہار کیا ہے۔انھوں نے ٹویٹر پر لکھا ہے:’’ مملکت سعودی عرب ظہران میں بھائیوں کے اجلاس پر شکر گزار ہے۔اس سربراہ اجلاس میں باہمی اتحاد اور درپیش چیلنجز سے نمٹنے کے لیے مربوط اور مخلصانہ کوششیں کی جائیں گی‘‘۔سعودی وزیر خارجہ عادل الجبیر نے جمعرات کو ایک بیان میں کہا تھا کہ عرب لیگ کے سربراہ اجلاس کے ایجنڈے میں قطر بحران شامل نہیں ہوگا۔انھوں نے عرب وزرائے خارجہ کے اجلاس میں کہا کہ فلسطینی ایشو سربراہ کانفرنس کے ایجنڈہ میں سر فہرست ہوگا۔اس سربراہ اجلاس میں شرکت کے لیے متعدد عرب لیڈر سعودی عرب پہنچ چکے ہیں۔ان میں مصر کے صدر عبدالفتاح السیسی ، عراقی صدر فواد المعصوم ، لبنانی صدرمشعل عون ،سوڈانی صدر عمر حسن البشیر اور اردن کے شاہ عبداللہ دوم شامل ہیں۔ ظہران میں آمد پر شاہ سلمان نے بہ نفس نفیس ان عرب قائدین کا استقبال کیا ہے۔علحدہ موصولہ اطلاع کے بموجب شاہ سلمان نے اس موقع پر علاقائی امور میں ایران کی برملا مداخلت کی مذمت کی ۔ انہوں نے مشرقی سعودی عرب کے ظہران میں تقریر کرتے ہوئے بتایا کہ ہم عرب علاقہ میں ایران کی دہشت گردانہ سرگرمیوں کی پر زور مذمت کااعادہ کرتے ہیں اور عرب ممالک کے امور میں اس کے برملا مداخلت کو مسترد کرتے ہیں۔ سعودی عرب کے شاہ سلمان نے آج اسرائیل کے امریکی سفارتخانہ کو تل ابیب سے یروشلم منتقل کرنے صدر امریکہ ڈونالڈٹرمپ کے فیصلہ پر تنقید کے ساتھ عرب لیگ چوٹی کانفرنس کاآج افتتاح کیا ۔

جواب چھوڑیں