مجسموں کو نقصان پہنچانے میں عیسائی مشنریز ملوث ہونے کا الزام

 بھارتیہ جنتا پارٹی کے رکن پارلیمنٹ نے الزام عائد کیا ہے کہ بابا صاحب بھیم رائو امبیڈ کر کے مجسموں کو نقصان پہنچانے میں عیسائی مشنری ملوث ہیں۔ بابا صاحب امبیڈ کر کی یوم پیدائش تقریب کے موقع پر اخباری نمائندوں کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے بلیا کے بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ نے کہاکہ عیسائی مشنریز کی جانب سے بابا بھرت سنگھ صاحب امبیڈ کر کے مجسموں کو نقصان پہنچایاجارہا ہے۔ اس مقصد کیلئے مشنریز کی جانب سے افراد کو مالیہ بھی فراہم کیا جارہا ہے جوکہ امبیڈ کر کے مجسموں کو توڑ پھوڑ میں سرگرم ہوگئی ہے۔ عیسائی مشنری پر تنقید کرتے ہوئے سنگھ نے الزام عائد کیاکہ امیت شاہ کی زیر قیادت بھارتیہ جنتا پارٹی جو خدمات انجا م دے رہی ہے وہ عیسائی مشنری کو پسند نہیں ہے۔ اس لئے عیسائی مشنریز مجسموں کو نقصان پہنچانے میں سرگرم ہورہی ہیں۔ ایم پی نے مزید بتایا ہے کہ امیت شاہ اور وزیر اعظم نریندرمودی کی جانب سے جو اقدامات کئے جارہے ہیں وہ عیسائی مشنریز کیلئے قابل قبول نہیں ہیں۔ انہوںنے یہ بھی الزام عائد کیاکہ عیسائی مشنریز بڑے پیمانے پر ہندئوں کو مذہب تبدیل کرنے کی ترغیب دے رہی ہیں۔ اس مقصد کیلئے انہیں مالیہ بھی فراہم کیا جارہا ہے۔ سنگھ کے بیان پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے ایس پی کے سینئر قائد رام شنکر ودھیارتھی نے کہاکہ بھارتیہ جنتا پارٹی امبیڈ کر کے نام ملک کے عوام کو گمراہ کرنے کی کوشش کررہی ہے۔

جواب چھوڑیں