پاکستان میں سکھوں کے ساتھ حکام کے رویہ پر ہند کا احتجاج

ہندوستان نے سکھ یاتریوں کے تعلق سے پاکستان کے اختیار کردہ رویہ پر احتجاج کیا ہے ۔ وزارت امور خارجہ نے یہ بات بتائی اور کہاکہ باہمی معاہدہ کے تحت 12اپریل سے 1800سکھ یاترریوں کا ایک گروپ پاکستان کے دورہ پر ہے اور یہ گروپ جوکہ سفارتکاروں سے ملاقات کا خواہاں ہیں حکام اس میں رکاوٹیں پیدا کررہے ہیں۔ وزارت خارجہ کے ذرائع نے مزید بتایاہے کہ ہندوستانی سکھوں کا وفد پاکستان کے مذہبی مقامات کا دورہ کررہا ہے۔ ہندوستانی ہائی کمشنر جوکہ بے ساکھی کے موقع پر سکھوں کو مبارکباد دینے کے خواہاں تھے انہیں اس وقت واپس ہونے پر مجبور کردیا جبکہ وہ گردوارہ پنجہ صاحب کو جارہے تھے،یہ واقعہ ہفتہ کو پیش آیا۔ وزارت خارجہ نے کہاکہ اس سے اس بات کا اظہار ہوتا ہے کہ پاکستان سفارتی تعلقات کے تعلق سے وینا کنونشن کی کھلی خلاف ورزی کررہا ہے۔ ہندوستان نے دورہ کنندہ یاتریوں کو ہندوستانی سفارتکاروں اور کونسلر ٹیم سے ملاقات میں رکاوٹ پیدا کرنے پر پاکستان سے شدید احتجاج کیا ہے۔ ذرائع نے بتایاکہ ہندوستانی ہائی کمشنر برائے پاکستان جوکہ مدعوئو کئے جانے پر گردوارہ پنجہ صاحب کا دورہ کررہے تھے ان سے اچانک کہاگیا کہ وہ واپس ہوجائیں ۔ حکام نے کہاکہ سیکوریٹی وجوہات کی بناء پر انہیں یہ کہنا پڑا۔

جواب چھوڑیں