آئی پی ایل میں امپائرنگ کے معیار پر پیٹرسن کی تنقید

انگلینڈ کے سابق اسٹار کھلاڑی کیوین پیٹرسن نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری اپنے پیغام میں کہاکہ کھلاڑی جب کوئی برا فیصلہ لیتے ہیں بری حرکت کرتے ہیں تو انہیں بہت سخت سزاں کا سامنا کرنا پڑتاہے لیکن لگتا ہے کہ امپائرز کو کوئی ہاتھ نہیں لگاتا۔ انہوں نے کہاکہ بگ بیش لیگ، پاکستان سوپر لیگ اور اب انڈین پریمیر لیگ میں ہونے والی امپائرنگ کا معیار انتہائی خراب ہے اس پر توجہ دینے کی ضرورت ہے۔ یہ لوگ کیریر تباہ کرسکتے ہیں۔ یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ پاکستان سوپر لیگ کے تیسرے ایڈیشن میں واقعی ہی ناقص امپائرنگ دیکھنے میں آئی اور بظاہر ملتان سلطانز کی ٹیم کو سب سے زیادہ نتائج بھگتنے پڑے جبکہ کئی ایک میاچس میں تو ملتان سلطانز کے کھلاڑی اور کوچ اس حوالہ سے شکایت کرتے بھی نظر آئے۔ ماہرین کرکٹ کا کہنا ہے کہ کیوین پیٹرسن کی بات قدرے درست ہے کہ ناقص امپائرنگ ناصرف میچوں کے نتائج پر اثرانداز ہوتی ہے بلکہ کئی کھلاڑیوں کے کیریر بھی متاثر کرسکتی ہے اور اس پر واقعی توجہ دینے کی ضرورت ہے کہ کھلاڑیوں کی کارکردگی کے ساتھ ساتھ امپائرز کی کارکردگی کیسے بہتر بنائی جائے۔

جواب چھوڑیں