آر ٹی سی ایمپلائز یونینوں کی کابینہ کی ذیلی کمیٹی سے بات چیت

ٹی ایس آر ٹی سی کے ایمپلائز یونینوں کے قائدین نے آج کابینہ کی ذیلی کمیٹی سے بات چیت کی ۔ وزیر فینانس ای راجندر کی زیر قیادت کا بینہ کی ذیلی کمیٹی کے ارکان میں وزرا جگدیش ریڈی ، ہریش راؤ اور پی مہندر ریڈی شامل ہیں۔ آر ٹی سی ایمپلائز یونینوں کے قائدین نے کابینہ کی ذیلی کمیٹی کے ارکان سے بات چیت کرتے ہوئے اپنے مطالبات پیش کئے ۔ ان یونینوں کے قائدین نے کہا کہ دیگر سرکاری محکموں کو بھی مالیاتی خسارہ کا سامنا ہے ۔ آیا، اُن محکموں کے ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ نہیں کیا جارہا ہے ؟ ان قائدین نے کہا کہ حکومت کی یہ ذمہ داری ہے کہ وہ عوام کو حمل ونقل کی بہتر سے بہتر سہولتیں فراہم کرے ۔ ان قائدین کا کہنا ہے کہ کم آمدنی یا خسارہ والی روٹس پر بھی آرٹی سی بسیں چلائی جارہی ہیں جبکہ ان روٹس پر کوئی خانگی بس نہیں چلائی جاتی ان قائدین نے اس بات کی نشاندہی کی کہ دنیا بھر میں کہیں بھی روڈ ٹرانسپورٹ کارپوریشن فائدہ میں نہیں ہے ۔ آر ٹی سی ایمپلائز قائدین کے مطالبات کی سماعت کے بعد کابینہ کی ذیلی کمیٹی نے اس بات کا تیقن دیا کہ وہ یونینوں کے مطالبات کو چیف منسٹر کے سامنے رکھیں گے اور آر ٹی سی ایمپلائز کیساتھ مکمل انصاف کیا جائے گا ۔ اس بات کا تذکرہ ضروری ہے کہ چیف منسٹر کے سی آر نے حالیہ دنوں یہ ریمارک کیا تھا کہ آر ٹی سی کو درپیش خسارہ کے سبب ملازمین کی تنخواہوں میں ریاست کے دیگر سرکاری ایمپلائز کے ساتھ اضافہ نہیں کیا جائے گا ۔ انہوںنے کہا کہ4 سال قبل حکومت نے آر ٹی سی ایمپلائز کی تنخواہوں میں 43 فیصد کا اضافہ کیا تھا ۔

جواب چھوڑیں