بیگم خالدہ ضیاء کو کرپشن کیس میں ضمانت منظور

 بنگلہ دیش کی سابق وزیراعظم بیگم خالدہ ضیاء کو جو کرپشن کیس میں 5 سال کی جیل کاٹ رہی ہیں‘ ملک کی سپریم کورٹ نے آج ضمانت منظور کی جس نے ان کے حق میں ہائی کورٹ کے احکام برقرار رکھے۔ ان کے وکیلوں کا تاہم کہنا ہے کہ بیگم خالدہ ضیاء جیل سے نہیں نکل سکیں گی کیونکہ دیگر 6کیسس میں ان کی درخواست ضمانت کی سماعت زیرالتوا ہے۔ عدالت کے عہدیداروں نے بتایا کہ سپریم کورٹ مرافعہ ڈیویژن کی 4 رکنی بنچ نے جس کے سربراہ جسٹس سید محمود حسین ہیں‘ بیگم خالدہ ضیاء کو ضمانت منظور کی۔ بیگم خالدہ ضیاء کے وکیل زین العابدین نے کہا کہ ہمیں توقع ہے کہ دیگر زیرالتوا کیسس میں بھی ضمانت مل جائے گی۔ 72 سالہ بیگم خالدہ ضیاء ‘ بنگلہ دیش نیشنلسٹ پارٹی (بی این پی) کی سربراہ ہیں۔ انہیں ضیاء آرفینج ٹرسٹ کے 21ملین ٹکہ (2 لاکھ 50 ہزار امریکی ڈالر) کے بیرونی عطیات میں غبن پر 8 فروری کو 5 سال کی جیل ہوئی تھی۔ یہ ٹرسٹ ان کے مرحوم شوہر ضیاء الرحمن کے نام پر ہے جو فوجی حکمراں سے سیاستداں بنے تھے۔ بیگم خالدہ ضیاء کو ناظم الدین روڈ‘ ڈھاکہ کی پرانی جیل میں رکھا گیا ہے ۔

جواب چھوڑیں