غزہ میں فلسطینی ڈاکٹر‘ بھائی کی لاش دیکھ کر سکتے میں آ گیا

فلسطینی حکومت نے پیر کے روز غزہ پٹی کی سرحد پر اسرائیلی فوج کی وحشیانہ کارروائی کو “دہشت ناک قتل عام” قرار دیا۔ کارروائی میں 61 فلسطینی شہید اور 2000 سے زیادہ زخمی ہو گئے۔سوشل میڈیا پر سرگرم حلقوں کی جانب سے ایک فلسطینی ڈاکٹر کی تصویر گردش میں آئی ہے جو غزہ کے ایک ہسپتال کے آپریشن تھیٹر میں اپنے بھائی کی لاش کو دیکھ کر سکتے کی حالت میں آ گیا۔تفصیلات کے مطابق ڈاکٹر معتصم النونو ہسپتال کے ایمرجنسی وارڈ میں زخمیوں کو علاج اور طبی خدمات فراہم کرنے میں مصروف تھا کہ اچانک اپنے بھائی معتز النونو کو سامنے دیکھ کر حیران رہ گیا۔ معتز غزہ پٹی کی اسرائیل کے ساتھ سرحد پر زخمی ہو گیا تھا اور ہسپتال منتقل کیے جانے کے چند گھنٹوں بعد دم توڑ گیا۔واضح رہے کہ پیر کے روز غزہ پٹی کے ساتھ سرحد پر اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے درجنوں فلسطینیوں کے شہادت نے عالمی برادری اور عرب دنیا میں غم و غصّے کی لہر دوڑا دی۔

جواب چھوڑیں