نمائش میدان پر8 اور9 جون کو مچھلی کی دوا کھلائی جائے گی

ریاستی وزیر افزایش مویشیان ٹی سرینواس یادو نے عہدیداروں کو ہدایت دی ہے کہ وہ دمہ اور دیگر مریضوں کو کھلائی جانے والی مچھلی کی دوا کیلئے بہتر اور نقائص سے پاک انتظامات کریں۔8 اور9جون کو نمائش میدان نامپلی میں مچھلی کی دوا کھلائی جائے گی جس کیلئے بڑے پیمانے پر انتظامات کرنے کی ضرورت ہے ۔ ضلع کلکٹر حیدرآباد یوگیتا رانا، کمشنر جی ایچ ایم سی ڈاکٹر بی جناردھن ریڈی ‘ حیدرآباد، میٹرو واٹر ورکس، آر اینڈ بی ، ٹرانسپورٹ اور پولیس عہدیداروں کے ساتھ اجلاس میں مچھلی کی دوا کھلانے کے انتظامات کا جائزہ لیا گیا ۔ ٹی سرینواس یادو نے کہا کہ173 برسوں سے باتھنی خاندان ، مرگ کے دن، دمہ اور دیگر مریضوں میں بلا معاوضہ مچھلی میں دوا کھلاتا ہے ۔ اور ہر سال یہ دوا کھلائی جارہی ہے ۔ اس دوا کو کھانے کیلئے ملک بلکہ بیرون ممالک سے عوام کی بڑی تعداد یہاں آتی ہے ۔ ان افراد کی سہولت کیلئے نقائص سے پاک انتظامات کرنے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ گذشتہ سال محکمہ سمکیات نے3لاکھ چھوٹی چھوٹی مچھلیوں کی فراہمی کے انتظامات کئے تھے۔ ہر سال ، یہاں آنے والے مریضوں کی تعداد میں دن بہ دن اضافہ ہوتا جارہا ہے۔ ایسے میں مچھلیوں کی فراہمی میں بھی اضافہ ناگزیر ہے ۔ مختلف مقامات سے آر ٹی سی کی خصوصی بسیں چلانے اور ان کی تعداد میں اضافہ کی ضرورت ہے ۔ دیگر تنظیموں کی جانب سے پینے کے پانی اور غذائی پاکٹوں کی فراہمی کے انتظامات کرنا چاہئے ۔ مریضوں اور دیگر افراد کی رہنمائی کیلئے بس اسٹانڈس اور ریلوے اسٹیشنوں پر خصوصی کاونٹرس قائم کئے جانے چاہئے ۔

جواب چھوڑیں