گورنر کرناٹک کو 117ارکان کی فہرست پیش

دباؤ بڑھاتے ہوئے جنتادل ایس اور کانگریس قائدین نے آج گورنر کرناٹک وجوبھائی والا سے ملاقات کی اور انہیں 117 ارکان اسمبلی کی فہرست پیش کی۔ انہوں نے گذارش کی کہ حکومت سازی کے ان کے دعویٰ پر غور کیا جائے۔ گورنر سے ملنے والے وفد میں جنتادل سیکولر کے ریاستی صدر ایچ ڈی کمارا سوامی اور کرناٹک پردیش کانگریس کے صدر جی پرمیشور شامل تھے۔ گورنر سے ملاقات دونوں جماعتوں کے لیجسلیچر پارٹی اجلاس کے بعد ہوئی۔ ملاقات کے بعد کمارا سوامی نے اخباری نمائندوں کو بتایا کہ جنتادل ایس اور کانگریس کے مابعد الیکشن اتحاد اور بی ایس پی کے ساتھ ہمارے ماقبل الیکشن اتحاد کے حساب سے ہمارے پاس 117 ارکان اسمبلی ہیں اور ان کی تائید کا مکتوب گورنر کو سونپ دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ دونوں جماعتوں نے اپنے لیجسلیچر پارٹی اجلاس میں منظورہ قراردادیں بھی گورنر کو سونپیں۔ کمارا سوامی نے کہا کہ گورنر نے وفد سے کہا کہ سپریم کورٹ کے فیصلوں پر ماہرین قانون سے صلاح و مشورہ کے بعد وہ کسی فیصلہ پر پہنچیں گے اور ہمیں اس کی جانکاری دیں گے۔ اگلا قدم گورنر کو اٹھانا ہے۔ کمارا سوامی نے کہا کہ گورنر نے ہم سے کہا ہے کہ وہ ہمارے دعویٰ پر ازروئے دستور غور کریں گے۔ میں امید کرتا ہوں کہ وہ پابند ِ دستور ہوں گے اور اپنا فیصلہ دیں گے۔ کمارا سوامی نے یہ بھی کہا کہ جنتادل ایس کے تمام ارکان اسمبلی پوری طرح ہمارے ساتھ ہیں۔ پرمیشور نے کہا کہ کانگریس لیجسلیچر پارٹی اجلاس میں منظورہ قرارداد کی ایک کاپی گورنر کو دی گئی ہے۔ گورنر نے کہا ہے کہ وہ سپریم کورٹ کے فیصلوں کی روشنی میں ازروئے قانون اور ازروئے دستور کام کریں گے۔ وہ گوا‘ میزورم‘ ناگالینڈ اور منی پور جیسی ریاستوں کی نظائر پر بھی غور کریں گے۔ جنتادل ایس اور کانگریس کے بعض ارکان اسمبلی بھی وفد کے ساتھ راج بھون آئے تھے۔

جواب چھوڑیں