کرناٹک میں بی جے پی حکومت کی تشکیل کیخلاف احتجاج

کرناٹک میں اکثریت کے بغیر بی جے پی قائدیدی یورپا کوتشکیل حکومت کی دعوت دینے سے متعلق گورنر وجوبھائی والا کے فیصلہ کے خلاف سابق رکن پارلیمنٹ انجن کماریادو کی قیادت میں یوتھ کانگریس کارکنوں نے آج گاندھی بھون کے روبرو وزیر اعظم نریندر مودی اور امیت شاہ کے پتلے نذرآتش کئے اور بی جے پی کے خلاف نعرے بلند کئے ۔ یوتھ کارکنوں نے سڑک پر دھرنا منظم کرتے ہوئے ٹریفک کو روک دیا جس کی وجہ سے اس مصروف ترین سڑک پر کچھ دیر کے لئے ٹریفک میں خلل پڑا ۔ پولیس نے انجن کماریادو ‘انیل کماریادو صدر یوتھ کانگریس کے علاوہ پارٹی کارکنوں کی کثیر تعداد کوگرفتار کرکے بیگم بازار پولیس اسٹیشن منتقل کیا۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے انجن کماریادو نے کہاکہ کرناٹک میں بی جے پی کو تشکیل حکومت کی دعوت دے کر جمہوریت کا گلاگھونٹ دیاگیا ہے ۔ جبکہ کانگریس اور جے ڈی ایس اتحاد کوواضح اکثریت کے باوجود گورنر وجوبھائی والا نے تشکیل حکومت کا موقع نہیں دیااور یدی یورپا کو تشکیل حکومت کی دعوت دے کرانہیں اکثریت ثابت کرنے 15دن کی مہلت دی تاکہ ارکان کی خریدی اور انحراف کی حوصلہ افزائی کی جاسکے ۔ انہوں نے کہاکہ کانگریس ہائی کمان کی ہدایت پر انہوں نے پارٹی کارکنوں کے ساتھ دھرنا منظم کیاہے ۔ قبل ازیں یوتھ کانگریس کارکنوں نے بی جے پی کے دفتر واقع کٹل منڈی (نزد نمائش میدان) کی جانب آگے بڑھنے کی کوشش کی تاہم پولیس نے انہیں آگے بڑھنے سے روک دیا اور حراست میں لے کر بیگم بازار پولیس اسٹیشن منتقل کیااور بعدازاں انہیں رہاکردیا۔

جواب چھوڑیں