دونوںشہروںمیں ماقبل مانسون تیز بارش ‘عوام کوگرمی سے راحت

دونوں شہرحیدرآباد اور سکندرآباد کے مختلف علاقوں میں آج شام زبردست بارش ہوئی ۔ شام 4:30بجے تک بھی شہرکا مطلع صاف تھا تاہم اچانک گھنے بادل چھاگئے اور گرج وچمک کے ساتھ تیزبارش کاسلسلہ شروع ہوگیا ۔ اس اچانک بارش کے باعث جہاں شدید گرمی سے پریشان عوام کو راحت ہوئی وہیں ٹریفک نظام میںخلل پڑا۔ شہر کے عابڈس ‘کوٹھی ‘سلطان بازار‘ نامپلی ‘بشیرباغ ‘لکڑی کاپل ‘ وجئے نگر کالونی ‘ مہدی پٹنم ‘ٹولی چوکی ‘ بہادر پورہ ‘ چارمینار ‘افضل گنج ‘ معظم جاہی مارکٹ ‘حمایت نگر ‘نارائن گوڑہ ‘باغ لنگم پلی ‘ سکندرآباد کے رجمنٹل بازار ‘جنرل بازار‘مونڈا مارکٹ‘رام گوپال پیٹ ‘چلکل گوڑہ ‘ وارث گوڑہ کے علاوہ مضافاتی علاقوں دلسکھ نگر ‘ ونستھلی پورم ‘ ایل بی نگر ‘چندانگر ‘ میاں پور اور شیرلنگم پلی میں بھی زبردست بارش ہوئی جس کے باعث کئی رہائشی علاقوں میں پانی جمع ہوگیا ۔بہادرپورہ چورہ ا جھیل کا منظرپیش کررہا تھا ‘تمام سڑکوںپرایک تادیڑھ فٹ پانی بہہ رہا تھا جس سے شہر کے کئی علاقوں میں ٹریفک مسدود ہوگئی ‘عوام کواپنے گھروں کوجانے میں شدید دشواریوں کاسامنا کرناپڑا۔دوسری طرف بارش کے ساتھ ہی کئی علاقوں میں برقی سربراہی مسدود کردی گئی ‘رات دیرگئے تک بھی پرانے شہر کے کئی علاقوں میں برقی سربراہی بحال نہیں ہوسکی ۔شہر میںاچانک بارش کے بعد ٹریفک پولیس عملہ اورجی ایچ ایم سی کے ملازمین فوری حرکت میں آگئے اور وہ جگہ جگہ پریشان حال عوام کی مدد کرتے ہوئے دیکھے گئے ۔ شہر میں ماقبل مانسون کی بارش سے پھرایک بارجی ایچ ایم سی کی نااہلی سامنے آگئی ۔ پھرایک بار واضح ہوگیا کہ بارش سے نمٹنے کے لئے جی ایچ ایم سی کے پاس ہنگامی منصوبہ بندی کا فقدان ہے ۔

جواب چھوڑیں