عوام مودی حکومت پربرہم: کجریوال

ملک بھر میں متعدد لوک سبھا اور اسمبلی نشستوں کے ضمنی انتخابات نتائج کے رحجانات پر رد عمل کا اظہار خیال کرتے ہوئے جس میں بی جے پی امیدوار یا تو پیچھے چل رہے ہیں یا پھر اپوزیشن امیدوار سے ہار گئے ہیں۔ دہلی چیف منسٹر اروند کجریوال نے کہا کہ یہ ظاہر کرتا ہے کہ ملک بھر میں لوگ نریندرمودی کی حکومت سے ناراض ہیں۔ آج کے نتائج یہ ظاہر کرتے ہیں کہ عوام میں مودی حکومت کے خلاف کافی برہمی پائی جاتی ہے اور آج تک لوگ یہ پوچھ رہے تھے کہ متبادل کیا ہے لیکن اب لوگ کہہ رہے ہیں کہ مودی متبادل نہیں ہیں پہلے انہیں برخواست کیا جائے۔ کجریوال نے یہ بات ٹویٹ میں کہی۔ ضمنی انتخابات کے نتائج سے یہ رحجان ملتا ہے کہ سماج وادی پارٹی امیدوار نے اترپردیش میں نور پور اسمبلی سیٹ جیت لی ہے جبکہ راشٹریہ لوک دل (آر ایل ڈی) کیرانا لوک سبھا نشست پر بی جے پی امیدوار سے آگے چل رہا ہے۔ آر جے ڈی امیدوار نے جوئی ہاٹ اسمبلی نشست ضمنی انتخاب میں اپنے قریبی جے ڈی (یو) حریف سے 40,000سے زائد ووٹوں سے جیت لی ہے۔ مغربی بنگال حکمراں پارٹی ترنمول کانگریس (ٹی ایم سی) امیدوار نے بھی شیتالا اسمبلی سیٹ ضمنی انتخاب میں جیتی ہے اس نے بی جے پی امیدوار سجیت گھوش کو 62,324ووٹوں سے ہرادیا۔ کیرالا کی حکمران سی پی آئی(ایم) زیر قیادت بائیں بازو جمہوری محاذ ایل ڈی ایف امیدوار نے چنیگنور اسمبلی سیٹ 209,56ووٹوں سے جیت لی۔ ایل ڈی ایف امیدوار نے اپنے قریبی کانگریسی زیر قیادت یو ڈی ایف امیدوار کو شکست دی ہے۔ اپوزیشن کانگریس میگھالیہ میں واحد بڑی جماعت کی حیثیت سے ابھری ہے اور اس نے ضمنی انتخابات میں باوقار امیٹی اسمبلی حلقہ سے کامیابی حاصل کی۔ کانگریس نے کرناٹک میں راجا راجیشوری نگر اسمبلی سیٹ دوبارہ حاصل کرلی ہے اس نے اپنے قریبی بی جے پی امیدوار کو 25,492ووٹوں کے فرق سے شکست دے دی۔

جواب چھوڑیں