اکھلیش اور ملائم سنگھ نے سرکاری بنگلوں کا تخلیہ کردیا

سماج وادی پارٹی صدر اکھلیش یادو اور ان کے والد ملائم سنگھ یادو نے سرکاری بنگلوں کا تخلیہ کردیا۔ حکومت ِ اترپردیش ، بہوجن سماج پارٹی سربراہ مایا وتی اور سابق چیف منسٹر نارائن دت تیواری کو نوٹسیں روانہ کرنے کی تیاری کررہی ہے، تاکہ وہ اپنے سرکاری بنگلوں کا تخلیہ کریں ، جو انہیں سابق چیف منسٹرس کی حیثیت سے الاٹ کیے گئے تھے۔ دونوں قائدین نے تقریباً 15 دن قبل نوٹس دیئے جانے کے باوجود بنگلوں کا تخلیہ کرنے سے بہانے بناتے ہوئے انکار کردیا تھا ، جس پر حکومت یہ قدم اٹھانے جارہی ہے۔ مایا وتی نے دعویٰ کیا کہ انہوں نے 6 شاستری مارگ بنگلہ کا تخلیہ کردیا ہے ، جو انہیں بحیثیت ِ سابق چیف منسٹر الاٹ کیا گیا تھا اور کوریر کے ذریعہ چابیاں روانہ کردی ہیں ، تاہم ریاستی ایسٹیٹ ڈپارٹمنٹ کا کہنا ہے کہ 13-A مال ایوینو جسے بی ایس پی کانشی رام یادگار وشرمالیہ ہونے دعویٰ کرتی ہے ، انہیں الاٹ کیا گیا بنگلہ ہے۔ حکومت ِ اترپردیش نے 6 شاستری مارگ بنگلہ کے بی ایس پی سربراہ کو الاٹمنٹ سے متعلق سرکاری مکتوب کی تحقیقات کا حکم دیا ہے ، کیوںکہ یہ فرضی مکتوب ہے۔ سابق چیف منسٹر نارائن دت تیواری نے بھی ہنوز اپنے بنگلہ کا تخلیہ نہیں کیا ہے اور ان کے ارکانِ خاندان نے ریاستی حکومت کی جانب سے تخلیہ کا نوٹس دیے جانے کے بعد یہاں ایک ٹرسٹ کا بورڈ آویزاں کردیا ہے۔ تیواری کے خاندان نے بھی تخلیہ کے لیے ایک سال کی مہلت طلب کی ہے ، تاہم ریاستی حکومت کوئی درخواست سننے تیار نہیں ۔ توقع ہے کہ دوسری نوٹس جلد جاری کی جائے گی۔ اسی دوران سماج وادی پارٹی صدر اور سابق چیف منسٹر اترپردیش اکھلیش یادو اور ان کے والد ملائم سنگھ یادو جنہوں نے لکھنؤ میں سرکاری بنگلہ کے تخلیہ کے لیے دو سال کی مہلت طلب کی تھی ‘ ریاستی دارالحکومت میں فوری خانگی عمارتوں میں منتقل ہوجانے کا فیصلہ کیا ۔ ملائم سنگھ کل رات دیر گئے عارضی طور پر ایک وی وی آئی پی گیسٹ ہاؤز میں منتقل ہوگئے، جب کہ اکھلیش اور ان کے ارکانِ خاندان بھی آج وی وی آئی پی گیسٹ ہاؤز میں منتقل ہوجائیںگے۔ اکھلیش اور ان کے والد کی نئی قیامگاہوں کو سامان کی منتقلی کا عمل چہارشنبہ کی رات شروع ہوا تھا ، جسے کل رات مکمل کرلیا گیا ۔ اکھلیش اپنے 4 وکرم آدتیہ مارگ بنگلہ کا تخلیہ کررہے ہیں ، جب کہ ان کے والد اس سے متصل بنگلہ چھوڑ رہے ہیں ۔ والد اور فرزند دونوں ہی شہر کے مضافاتی علاقوں میں خانگی بنگلوں میں منتقل ہورہے ہیں۔ اکھلیش نے ریاستی ایسٹیٹ ڈپارٹمنٹ کو ایک نوٹس روانہ کی ہے اور ان سے کہا ہے کہ وہ انہیں وی وی آئی پی گیسٹ ہاؤز الاٹ کریں ، تاکہ وہ عارضی طور پر اپنے ارکانِ خاندان کو وہاں منتقل کرسکیں ۔ دونوں جائیدادوں کے تخلیہ کے لیے دی گئی مہلت 3 جون کو ختم ہوجائے گی۔ ایس پی ذرائع نے بتایا کہ ریاستی حکومت کی جانب سے اکھلیش اور ملائم سنگھ کو سپریم کورٹ کے احکام کے مطابق 17 مئی کو دی گئی نوٹس اور 15 دن کی مہلت کے خاتمہ کے پیش نظر بنگلوں کے تخلیہ کا عمل شروع کیا گیا۔ اکھلیش نے پہلے ہی یہ اعلان کیا ہے کہ ان کا مکان وکرم آدتیہ مارگ پر زیر تعمیر ہے اور اس وقت تک وہ کرایہ کے مکان میں قیام کریںگے۔

جواب چھوڑیں