ہم نے سیکورٹی فورسز کو فری ہینڈ دیا ہے: ڈپٹی چیف منسٹر کویندر گپتا

جموں وکشمیر کے ڈپٹی چیف منسٹر کویندر گپتا نے کہا کہ ہم نے سیکورٹی فورسز کو فری ہینڈ دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ فورسز کا حوصلہ گرنے نہیں دیا جائے گا۔ نائب چیف منسٹر نے ان باتوں کا اظہار ہفتہ کے روز یہاں ترکوٹہ نگر میں واقع بی جے پی دفتر پر نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے کیا۔ ایک نامہ نگار کی جانب سے نوہٹہ واقعہ میں سی آر پی ایف یونٹ کے خلاف ایف آئی آر کے اندراج کے بارے میں پوچھے جانے پر کویندر گپتا نے کہا ’سیکورٹی فورسز کا حوصلہ کبھی گرنے نہیں دیا جائے گا۔ ہم نے ان کو فری ہینڈ دیا ہے۔ ان کو ہم نے یہ بھی کہا ہے کہ وہ پہلی گولی نہ چلائیں۔ اگر دوسری طرف سے گولی چلتی ہے تو اس کا موثر جواب دیا جائے۔ ظلم کرنا بھی گناہ اور ظلم سہنا بھی گناہ ہے‘۔ واضح رہے کہ سری نگر کی تاریخی و مرکزی جامع مسجد کے باہر جمعہ کو احتجاجی جھڑپوں کے دوران سنٹرل ریزرو پولیس فورس (سی آر پی ایف) کی ایک جیپ نے دو احتجاجی نوجوانوں کو کچل ڈالا۔ ان میں سے ایک 21 سالہ نوجوان اسپتال میں دم توڑ بیٹھا۔ نائب چیف منسٹر نے رمضان سیز فائر پر کہا کہ جنگجوؤں کی طرف سے چلنے والی گولیوں کا موثر جواب دیا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا ’سیز فائر کبھی بھی یکطرفہ نہیں ہوتا۔ ہم نے کہا تھا کہ ہماری طرف سے گولی نہیں چلے گی ، لیکن اگر دوسری طرف سے کوئی گولی چلاتا ہے تو اس کو موثر جواب دیا جائے گا‘۔ انہوں نے وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ کے مجوزہ دورہ ریاست پر کہا ’وزیر داخلہ اکثر جموں وکشمیر کی صورتحال کا جائزہ لینے کے لئے آتے رہتے ہیں۔ وہ 6 اور 7جون کو ریاست میں ہوں گے‘۔

جواب چھوڑیں