سروجنی آئی ہاسپٹل میں جنوبی ہند کے اولین آئی بینک کا افتتاح

تلنگانہ کے وزیر صحت ڈاکٹر سی لکشما ریڈی نے آج یہاں سروجنی دیوی آئی ہاسپٹل میں ‘ سرکاری سیکٹر میں جنوبی ہند کے اولین ’’آئی بینک ‘‘ کا افتتاح کیا ۔ اس موقع پر اخبارنویسوں سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ حکومت نے غریب عوام کو بہتر علاج کی سہولتیں فراہم کرنے کے لیے ریاست میں شعبہ صحت کو مستحکم کرنے متعدد اقدامات کئے ہیں ۔ قبل ازیں ایسے اقدامات سے غفلت برتی گئی تھی ۔ ریاستی حکومت کی جانب سے کئے گئے اقدامات کی وضاحت کرتے ہوئے وزیر صحت نے کہاکہ ملک میں یہ پہلا موقع ہے کہ یہاں گاندھی ہاسپٹل میں ایک فرٹیلیٹی سنٹر قائم کیاگیاہے ۔ کارپوریٹ ہاسپٹلوں کے معیار کے مساوی تمام قسم کے ٹسٹوں کے لیے ایک ہب اور ماڈل تلنگانہ ڈائگناسٹک سنٹر قائم کیاگیاہے ۔ ریڈی نے کہاکہ قبل ازیں اس سرکاری ہاسپٹل میں غریب لوگوں کے لیے معمول کا علاج دستیاب تھا ۔ اگر خصوصی ( اسپشلائزڈ) علاج کی ضرورت ہوتو ایسے مریضوں کو حیدرآباد رجوع کیاجاتاتھا ۔لیکن اب ریاست کے تمام سرکاری ہاسپٹلوں میں ہر قسم کے خصوصی علاج کی سہولت دستیاب ہے ۔ اس قسم کی بنیادی سہولتیں اور طبی سہولتیں ‘ تلنگانہ کے قیام کے بعد فراہم کی گئی ۔ مسٹر ریڈی نے دعوی کیا کہ اب عوام الناس ‘ طبی علاج کے لیے خانگی ہاسپٹلوں کے بجائے سرکاری ہاسپٹلوں کو پسند کررہے ہیں ۔ سرکاری ہاسپٹلوں کو مزید مستحکم کرنے کے لیے ریاستی حکومت ‘ کارپوریٹ اداروں سے سی ایس آر فنڈس حاصل کرنے کامنصوبہ بنارہی ہے ۔ ڈاکٹر لکشماریڈی نے کہاکہ مذکورہ آئی بینک ‘ ایک کروڑ روپئے کی سرمایہ کاری کے ذریعہ قائم کیاگیاہے ۔ پہلے یہاں صرف 24 گھنٹوں کے لیے کارنیا کو محفوظ کرنے کی استعداد تھی لیکن اب یہاں کارنیا کو 60 دنوں تک محفوظ رکھنے کی صلاحیت ہے ۔ انہوں نے مزید کہاکہ ملک کی جملہ آبادی تقریباً120کروڑ ہے ۔ تقریباًایک کروڑ لوگ ہر سال فوت ہورہے ہیں ۔ اگر کم ازکم 2 فیصد افراد اپنے آنکھوں کاعطیہ دیں تو ملک سے اندھے پن کا کُلی خاتمہ کیاجاسکے گا ۔ وزیر صحت نے عوام پر زور دیا کہ وہ آنکھوں کا عطیہ دیں اور نابینا افراد کو گویا زندگی عطا کریں ۔

جواب چھوڑیں