فٹبال ورلڈکپ کا آج سے آغاز۔سیکوریٹی کے سخت انتظامات

فیفا فٹبال ورلڈکپ کا کل سے آغاز ہوگا۔ میگا ایونٹ روس کے مختلف شہروں میں کھیلا جائے گا جس میں جملہ 32 ٹیمیں حصہ لیںگی جنہیں 8 گروپس میں تقسیم کیاگیاہے۔ عالمی چمپئن جرمنی ایونٹ میں اپنے خطاب کا دفاع کرے گی۔ افتتاحی مقابلہ میزبان روس اور سعودی عرب کے درمیان کھیلا جائے گا۔ عالمی کپ کیلئے میزبان روس کے متعدد شہروں کو دلہن کی طرح سجادیا گیاہے جبکہ افتتاحی تقریب کی تیاریاں بھی مکمل کرلی گئیں ہیں۔ سیاحوں کیلئے خصوصی میٹرو ٹرینیں چلائی جارہی ہیں۔ ٹکٹ کے حصول کیلئے مقامی شائقین کی لمبی قطاریں لگی ہوئی ہیں۔ روسی صدر ولادیمیر پوتن کو فیفا فین آئی ڈی کارڈ جاری کردیا گیا ہے۔ ماسکو میں ورلڈکپ کی یاد میں میوزیم بھی قائم کیاگیاہے جہاں ٹرافیاں، تاریخ، فٹبالز، مشہور فٹبالرز کی شرٹس اور شوز نمائش کیلئے پیش کئے گئے ہیں۔ پریکٹس کے دوران ارجنٹائن کے لیونل میسی ان ایکشن ہوئے تو سینکڑوں شائقین فٹبال ہیرو کی جھلک دیکھنے گراؤنڈ پہنچ گئے۔ اس مرتبہ دفاعی چمپئن جرمنی کے ساتھ ساتھ ارجنٹینا‘ اسپین اور برازیل کو پسندیدہ ٹیموں میں شامل کیاگیاہے ۔ فیفا ورلڈکپ ٹرافی پر اب تک یورپ اور جنوبی امریکہ کی اجاری داری قائم ہے۔ ان دو خطوں کے علاوہ کسی اور براعظم سے تعلق رکھنے والا کوئی ملک عالمی چمپئن نہیں بن سکا ہے۔ آخری 3 فائنل میں جرمنی، اسپین اور اٹلی کی فتوحات کا مطلب یہ ہے کہ مجموعی طورپر یورپ کا پلہ 11 فتوحات کے ساتھ بھاری ہے جبکہ جنوبی امریکی ممالک نے 9 مرتبہ یہ مقابلہ جیتے ہیں ۔ برازیل اب تک 5 بار ورلڈکپ جیت کر سرفہرست ہے۔ اس کے بعد اٹلی اور جرمنی 4,4، ارجنٹینا اور یوراگوئے 2,2، جبکہ انگلینڈ، فرانس اور اسپین ایک ایک بار عالمی چمپئن بن چکے ہیں ۔ایونٹ کے دوران متنازعہ فیصلوں سے بچنے اور منصفانہ نتائج کیلئے ریفری کی معاونت کیلئے جدید ترین ٹکنالوجی پر مبنی ویڈیو اسسٹنٹ ریفری سسٹم متعارف کروایا گیا۔ اس سسٹم کا اس سے قبل انگلش پریمیر لیگ کے ساتھ ساتھ جرمنی اور انگلینڈ کی فٹبال لیگز میں بھی تجربہ کیاجا چکا ہے۔ ایونٹ کیلئے سیکوریٹی کے بھی سخت انتظامات کئے گئے ہیں۔ میاچ ہندوستانی معیاری وقت کے مطابق رات 8:30 بجے سے کھیلا جائے گا۔

جواب چھوڑیں