ہریتاہارم پروگرام میں عوام کوشراکت دار بنانے کی ضرورت:وزیر جوپلی کرشنا راو

ریاست تلنگانہ میں ہریتاہارم پروگرام کاچوتھا مرحلہ بہت جلدشروع ہوگا۔ ریاست میں جنگلات کے رقبہ میں توسیع کے لئے شروع کردہ ہریتاہارم پروگرام دنیاکاتیسرابڑا پروگرام ہے ۔ ریاستی وزیر پنچایت راج جوپلی کرشنا رائو نے پیر کے روز کہاکہ عوام کے تمام طبقات کوچاہئے کہ وہ اعزازی طورپر اس ہریتاہارم پروگرام میں شرکت کریں تاکہ ریاست میں جنگلات کے رقبہ میں توسیع کی جاسکے ۔ جنگلات کے رقبہ میں دن بہ دن کمی کے سبب ریاست میں امساک باراں کی صورتحال درپیش ہے جس کے سبب خشک سالی کی صورتحال پیداہونے کا خدشہ ہے ۔ جوپلی کرشنا رائو نے وزیر جنگلات جوگورامنا کے ساتھ دولہ پلی فاریسٹ اکیڈیمی میں عہدیداروں کے دوروزہ تربیتی کیمپ کے افتتاحی سیشن سے خطاب کرتے ہوئے یہ بات کہی۔ اس کیمپ میں ہر موضع میں نرسریوں کوفروغ دینے کی تربیت فراہم کی جارہی ہے ۔ انہوںنے عہدیداروں پرزور دیا کہ وہ اس عظیم پروگرام میں عوام کو شراکت دار بنانے کے لئے ایک عملی منصوبہ تیار کریں اور اس پروگرام میں عہدیداروں کے ساتھ ساتھ عوامی نمائندو ںکوبھی شراکت دار بناناچاہئے ۔ انہوںنے دعویٰ کیا کہ حکومت تلنگانہ نے جنگلات کے رقبہ میں توسیع کے لئے ملک کو ہریتاہارم پروگرام کی شکل میں ایک عظیم نظریہ پیش کیاہے ۔ رائو نے مزید کہاکہ پنچایت راج نئے ایکٹ کے مطابق ہرگائوں میں نرسریز(پودوں کواگانے) کو فروغ دینا اورعوام میںان کی پسندکے پودوں کو تقسیم کرنا لازمی ہوجائے گا۔ سرسبزعلاقہ کوبڑھاوا دینے کا مقصد ضرور حاصل کیاجاسکتا ہے بشرطیکہ عوام ‘ عہدیداروں اورعوامی نمائندوں کااس سلسلہ میں لازمی طورپر تعاون حاصل کیا جائے۔ اس سلسلہ میں اس پروگرام کی مناسب تشہیر بھی کی جانی چاہئے ۔ وزیر جنگلات جوگورامنا نے کہاکہ ہریتاہارم پروگرام کے ذریعہ ریاست میں جنگلات کوفروغ دینے کا نظریہ کے سی آر نے پیش کیاہے ۔ انہوںنے کہاکہ ریاست میں اس سے قبل شروع کردہ ہریتاہارم کے تین مرحلے انتہائی کامیاب رہے ہیں۔ تلنگانہ میں چوتھامرحلہ بہت جلد شروع کیاجانے والا ہے اس مرحلہ کوبھی کامیاب بنانے کے لئے عوام ‘عہدیداروں اورعوامی نمائندوں کاتعاون ضروری ہے ۔

جواب چھوڑیں