تیل کی پیداوار میں اضافہ پر ایران کی وارننگ

ایران کے نائب صدر اسحاق جہانگیری نے کہا ہے کہ ان کے ملک کو اپنا تیل فروخت کرنے میں کسی مشکل کا سامنا نہیں ہو گا اور اس کے ساتھ ان ممکنہ ممالک کو تنبیہ کی جو ایران پر امریکی پابندیوں کے بعد تیل کی بین الاقوامی منڈی میں اس کے حصے کی جگہ لینا چاہیں گے۔اس سے پہلے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے سعودی عرب پر زور دیا ہے کہ وہ عالمی مارکیٹ میں تیل کی بڑھتی ہوئی قیمت پر قابو پانے کی خاطر تیل کی پیداوار میں اضافہ کریں۔اتوار کو ایران کے نائب صدر اسحاق جہانگیری نے کہا کہ’ اس جنگ میں جو بھی ملک یہ چاہتا ہے کہ تیل کی منڈی میں ایران کی جگہ لے لے، وہ ایرانی عوام اور بین الاقوامی برادری سے دغا بازی کرے گا اور یقیناً وہ اس دغا بازی کی قیمت بھی ادا کرے گا۔ ‘قومی صعنت اور کان کنی کے دن کے موقع پر تقریب سے خطاب میں نائب صدر اسحاق جہانگیری نے یہ بیان دیا جسے ایرانی ٹی وی چینل آئی آر آئی این این پر براہ راست نشر کیا گیا۔ائب صدر اسحاق جہانگیر نے کہا کہ امریکہ تیل کے علاوہ اس کی دیگر برآمدات اور کرنسی کی ترسیل کو متاثر کرنا چاہتا ہے اور اس ساتھ کہا کہ بعض علاقائی ممالک ایران میں غیر ملکی کرنسی کے قلت کے معاملے کو بڑھاوا دے رہے ہیں۔قبل ازیں موصولہ اطلاع کے بموجب امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے اصرار پر سعودی عرب کے شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے تیل کی پیداوار بڑھانے پر اتفاق کیا ہے۔ وائٹ ہاوس نے ہفتہ کو ایک بیان جاری کرکے اس بات کی اطلاع دی۔بیان کے مطابق مسٹر ٹرمپ نے مارکیٹ میں تیل کی کمی کے پیش نظر سعودی عرب کے شاہ سے فون پر بات کی اور تیل کی پیداوار بڑھانے کی اپیل کی۔ امریکی صدر کے اصرار پر سعودی عرب نے روزانہ 20 ملین بیرل تیل کی پیداوار بڑھانے پر اتفاق کیا۔ سعودی عرب کے شاہ نے کہا کہ ضرورت پڑنے پر تیل کی پیداوار مزید بڑھائی جائے گی۔

جواب چھوڑیں