جی ایس ٹی، آرایس ایس ٹیکس: چدمبرم

سابق وزیرفینانس پی چدمبرم نے آج جی ایس ٹی کو اس کی پہلی سالگرہ پرکھل کرنشانہ بنایا۔ انہوں نے اسے آرایس ایس ٹیکس قراردیا جس نے ٹیکس کا بوجھ بڑھادیا اور عوام میں گالی بن گیا۔سینئر کانگریس قائد نے کہا کہ یہ حقیقی جی ایس ٹی نہیں ہے۔ جی ایس ٹی کا مطلب صرف واحد ٹیکس ہوتا ہے۔ اس میں کئی شرحیں ہیں۔ اسے آرایس ایس ٹیکس کہئیے۔ یہ ناقابل تردید حقیقت ہے کہ جی ایس ٹی نے معاشی فروغ پر کوئی مثبت اثرنہیں ڈالا۔سابق وزیرفینانس پی چدمبرم نے آج جی ایس ٹی کی پہلی سالگرہ پرحکومت کو نشانہ تنقید بنایا۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ جی ایس ٹی نے عام آدمی پر ٹیکس کا بوجھ بڑھایا ہے اور وہ عوام میں ’بُرا لفظ‘ بن گیا ہے۔ انہوں نے یہاں اخباری نمائندوں سے کہا کہ جی ایس ٹی کا ڈیزائن، ڈھانچہ شرحیں اور عمل آوری اتنے ناقص ہیں کہ جی ایس ٹی، تاجروں، برآمدکنندگان اور عام شہریوں کے نزدیک گالی بن گیا ہے۔ جی ایس ٹی سے صرف ایک طبقہ خوش ہے اور وہ ہے ٹیکس عہدیداران جنہیں وسیع اختیارات مل گئے ہیں۔ چدمبرم نے کہا کہ عام رائے ہے کہ جی ایس ٹی نے عام شہری پر ٹیکس بوجھ بڑھایا ہے۔ ٹیکس کا بوجھ یقیناً نہیں گھٹا ہے جیسا کہ وعدہ کیاگیاتھا۔ جی ایس ٹی کے معاملہ میں شروع سے بی جے پی حکومت کا ہرقدم ناقص تھا۔ چیف اکنامک اڈوائزر کا مشورہ تک حکومت نے نظرانداز کردیا۔انہوں نے زوردے کرکہا کہ جی ایس ٹی کی تجویز اصل میں یوپی اے نے 2006ء میں پیش کی تھی۔ چدمبرم 4مرتبہ وزیرفینانس رہے۔ انہوں نے کہا کہ بالواسطہ ٹیکس ڈھانچہ کو ٹھیک کرنے کے لئے ماہرین کو آزادی دینی چاہئیے۔ انہوں نے کہا کہ جی ایس ٹی کی اصلاح کے لئے مسٹرفکس اٹ قسم کے لوگ لگائے گئے ہیں۔ انہوں نے بالواسطہ ٹیکس نظام کو بہترلاگو کرنے کے لئے کئی تجاویز پیش کیں۔ انہوں نے کہا کہ پٹرولیم اشیاء کو بھی اس کے تحت لاناچاہئیے۔انہوں نے کہا کہ ٹیکس شرح کو دھیرے دھیرے گھٹا کر ایک شرح میں بدل دیناچاہئیے۔

جواب چھوڑیں