جی ایس ٹی کی پہلی سالگرہ پرعوام کومبارکباد۔ وزیراعظم کا انٹرویو

وزیراعظم نریندرمودی نے آج یہ کہتے ہوئے جی ایس ٹی کی واحد ٹیکس شرح کو خارج ازبحث قراردیا کہ مرسڈیز(کار) اور مِلک (دودھ) پرٹیکس کی یکساں شرح لاگو نہیں کی جاسکتی۔ کانگریس کا یکساں 18 فیصد ٹیکس شرح کا مطالبہ مان لیاجائے تو غذا اور ضروری اشیاء پر ٹیکس بڑھ جائے گا۔ مودی نے کہا کہ گوڈس اینڈ سرویس ٹیکس(جی ایس ٹی) لاگو ہونے کے اندرون ایک سال بالواسطہ ٹیکس بنیاد 70 فیصد سے زائد بڑھی ہے۔ ناکے ختم ہوگئے اور 17 ٹیکس اور23 سس واحد ٹیکس میں ضم ہوگئے۔ انہوں نے کہا کہ ٹیکس کا صرف ایک زمرہ ہو، یہ نہایت آسان ہے لیکن اس کا مطلب یہ ہوگا کہ غذائی اشیاء صفر فیصد زمرہ میں نہیںرہیں گی۔ کیا ہم مِلک اور مرسڈیز پر یکساں ٹیکس لگاسکتے ہیں؟۔ 350کروڑ انوائس پراسس ہوئے اور11کروڑ رٹرن فائل ہوئے ۔ کیا جی ایس ٹی پیچیدہ ہے؟۔ چیک پوسٹ برخواست ہوئے۔ ریاستوں کی سرحدوں پر اب ٹرکس کی قطار نہیں۔ ٹرک ڈرائیوروں کا نہ صرف قیمتی وقت بچ رہا ہے بلکہ لاجسٹک شعبہ پھل پھول رہا ہے۔ملک کی پیداواریت بڑھ رہی ہے۔وزیراعظم نے سوراجیہ میگزین کوایک انٹرویومیں یہ بات کہی۔ آئی اے این ایس کے بموجب وزیراعظم مودی نے اتوار کے دن ملک کے عوام کو جی ایس ٹی کی پہلی سالگرہ کی مبارکباد دی۔ وزیرکوئلہ وریل پیوش گوئل نے بھی مبارکباد دی۔انہوں نے ٹوئٹ کیا کہ ملک کوجی ایس ٹی کا ایک سال مکمل ہونے پر مبارکباد۔ یہ ہندوستان میں تبدیلی لانے والا بڑا ٹیکس ہے۔ اس سے معاشی ترقی ہوئی ہے۔ معیشت میں کھلاپن آیا ہے۔ یہ عوام کے لئے آسان ہے۔ جی ایس ٹی کو آزادی کے بعد ہندوستان میں سب سے بڑی معاشی اصلاح کہا جارہا ہے۔

جواب چھوڑیں