دہلی میں ایک ہی خاندان کے 11افراد کی پُراسرار موت

شمالی دہلی کے بُراڑی علاقہ میں آج صبح ایک خاندان کے 11افراد بشمول 7 عورتیں پُراسرار حالت میں مردہ پائے گئے۔ پولیس نے یہ بات بتائی۔ نعشیں لٹکی پائی گئیں جن کی آنکھوں پر پٹی بندھی تھی۔ ایک 75 سالہ خاتون کی نعش فرش پر پائی گئی۔ مرنے والوں میں 2کمسن(نابالغ) ہیں۔ چیف منسٹر اروندکجریوال اور بی جے پی دہلی یونٹ کے صدرمنوج تیواری نے بُراڑی کا دورہ کیا۔ پولیس کے بموجب اسے ایک پڑوس سے ابتدائی جانکاری ملی تھی کہ 6 تا7افراد نے خودکشی کرلی ہے لیکن بُراڑی پہونچنے پرپایاگیاکہ ایک ہی خاندان کے 11افراد مرے ہیں۔یہ خاندان پلائی ووڈ کا کاروبارکرتا تھا اور علاقہ میں20برس سے رہ رہا تھا۔ مقامی لوگوں نے یہ بات بتائی۔ پولیس کا کہنا ہے کہ وہ تمام زاویوں سے تحقیقات کررہی ہے۔ یواین آئی کے بموجب چیف منسٹر دہلی اروندکجریوال نے اتوار کے دن شمالی دہلی کے علاقہ بُراڑی کا دورہ کیاجہاں ایک خاندان کے 11افراد بشمول 7 خواتین پراسرارحالات میں مردہ پائے گئے۔ چیف منسٹر نے جن کے ساتھ عام آدمی پارٹی رکن اسمبلی حلقہ بُراڑی سنجیوجھا موجود تھے صورتحال کا جائزہ لیا اور مقامی لوگوں سے بات کی۔ لوگوں نے کجریوال کو خاندان کے بارے میں بتایا۔ دہلی بی جے پی کے صدر منوج تیواری نے بھی براڑی پہنچ کر صورتحال کا جائزہ لیا۔11نعشوں میں 7 خواتین اور 4 مرد ہیں۔ 10نعشیں لٹکی پائی گئیں اور ایک نعش فرش پرپڑی تھی۔ پولیس کا کہناہے کہ مرنے والوں میں ایک بوڑھی عورت اس کے 2بیٹے، بہوئیں تقریباً16-17 برس کے 2بچے اور 4دیگرخواتین شامل ہیں۔ جوائنٹ سی پی سنٹرل رینج راجیش کھرانہ نے بتایاکہ پولیس تمام پہلوؤں سے تحقیقات کررہی ہے۔ فی الحال یہ مشتبہ خودکشی کا کیس ہے۔

جواب چھوڑیں