بُلٹ ٹرین کی صورتگری ہرگز نہیں ہوگی:راہول گاندھی

صدر کانگریس راہول گاندھی نے آج وزیر اعظم نریندرمودی کے ’’ بلند دعوئوں ‘‘ اور دعویٰ کیاکہ بُلٹ ٹرین‘ جس کا بہت چرچہ ہے‘ ممکن ہے کہ شرمندۂ عمل ہی نہ ہو ۔ راہول گاندھی نے جو امیٹھی کے دوروزہ دورہ پر آج صبح یہاں پہنچے کہاکہ ’’ اُس کو ایک بُلٹ ٹرین نہیں کہا جانا چاہئے ۔اِس کو ایک میجک ٹرین کہا جانا چاہئے جس کی صورت گری ہرگز نہیں ہوگی اگر اِس ٹرین کی صورت گری ہونی ہی ہے تو وہ ‘ کانگریس کی حکومت میں ہونے والی ہے‘‘۔ صدرکانگریس نے بی جے پی حکومت کی خارجہ پالیسی پر تنقید کرتے ہوئے کہاکہ سرحد پر ڈوکلم کے متنازعہ اور حساس مسئلہ کے باوجود مودی نے صدرچین کے ساتھ ‘ جبکہ انہوںنے ہندوستان کا دورہ کیا تھا ‘ ایک جھولے پر بیٹھنے کو ترجیح دی تھی۔ راہول گاندھی نے پارٹی کارکنوں کو پارٹی سرگرمیوں سے بعجلت واقف کرانے کیلئے ایک ’’ شکتی‘‘ پورٹل کا افتتاح کیا۔ انہوںنے الزام لگایاکہ حکمراں بی جے پی کی پالیسیوں کے سبب بڑے تاجروں کو فائدہ ہورہا ہے جبکہ متوسط طبقہ اور غریب طبقات کو(گذربسرکیلئے) جدوجہد کا سامنا ہے۔ یہاں پارٹی کارکنوں سے بات چیت کرتے ہوئے راہول گاندھی نے مزید کہاکہ ’’ 15بڑے تاجروں کے دولاکھ کروڑ روپئے معاف کردیئے گئے ۔نریندرمودی جی کا پہلا ٹاسک یہ تھا کہ انہوںنے چھوٹے اور متوسط طبقہ کے تاجروں کی کمر توڑدی‘‘۔

جواب چھوڑیں