عمل آوری کے ایک سال بعد بھی جی ایس ٹی کے کام جاری:پرنسپال سکریٹری سومیش کمار

تلنگانہ کے پرنسپل سکریٹری کمرشیل ٹیکسس اوراکسائز سومیش کمارنے آج گوڈس اینڈ سرویسس ٹیکس( جی ایس ٹی) کوملک کے راست ٹیکس نظام میںاصلاحات کابڑاقدم قراردیااورکہاکہ جی ایس ٹی کے نفاذ کے ایک سال کے بعد بھی اس کے کام جاری ہیں۔ جی ایس ٹی کے نیٹ ورکس میں چند ایک رکاوٹیں اورنقائص بھی ہیں جنہیں دورکرنے کی ضرورت ہے۔ اسوچم کی جانب سے چہارشنبہ کو یہاں منعقدہ جی ایس ٹی پر قومی سمینار سے خطاب کرتے ہوئے سومیش کمار نے کہاکہ میں یہ دیکھ رہاہوں کہ جی ایس ٹی پر عمل آوری کا دوسرا سال اطمینان بخش ثابت ہوگا۔ انہوںنے مزید کہاکہ جی ایس ٹی کی ایک خوبی یہ ہے کہ تجارتی سامان کی فہرست میںمطابقت ممکن ہوپائے گی ۔ مگربدقسمتی یہ ہے کہ جی ایس ٹی نیٹ ورک( جی ایس ٹی این) یہ سہولت فراہم کرنے سے قاصر رہا ہے۔ بسااوقات وہ تلنگانہ میں ڈاٹاکی تفصیلات سے بہت کچھ کرناچاہتے ہیں مگر ہمیں ڈاٹادستیاب نہیں ہوسکا۔ اس لئے ہم جی ایس ٹی این کواپنانے پر مجبورہیں۔ کمارنے جی ایس ٹی کے پہلے سال کی تکمیل کی تفصیلی رپورٹ بھی پیش کی۔ انہوںنے کہاکہ درپیش ضروریات پر جی ایس ٹی کونسل بھی لچکدار رویہ اپنارہی ہے جوایک اچھی بات ہے۔ جی ایس ٹی نیٹ ورک پر انہیں تحفظات ہیں اس کومزید بہتر بنایاجاسکتاہے۔ سومیش کمار نے کہاکہ اگر آج جی ایس ٹی پر جوبھی تنقیدیں کی جارہی ہیں وہ جی ایس ٹی کی صحیح شکل نہیں ہے۔ یہ ایک نیٹ ورک ہے جوہمیں درپیش مشکلات پر ردعمل نہیں دے سکتا۔ انہوںنے صنعت کاروں سے کہاہے کہ وہ درپیش چیالنجس سے نمٹنے کے لئے مختلف تجاویز کے ساتھ آگے آئیں ۔ سومیش کمارنے کہاکہ ٹیکسوں کے سلاب کی شرح کومعقول بنانے کی ضرورت ہے۔ اس کے ساتھ ریفنڈ کے عمل کوحد میں رکھنا بھی ضروری ہے۔ انہوںنے کہاکہ تمام محکمہ جات ، سنٹرل اینڈاکسائز کوبھی اپنا ذہن تبدیل کرناہوگا اوران محکموں کو جی ایس ٹی کی ضروریات سے ہم آہنگ ہوناہوگا۔ انہوںنے کہاکہ تلنگانہ کوجی ایس ٹی معاوضہ نہیں مل رہاہے۔ اس تعلق سے چندافراد بُراتصور کرتے ہیں مگرمعاوضہ نہ ملنے پر وہ ، باعث فخر مانتے ہیں۔ کیونکہ ہم کومرکزی حکومت کے معاوضہ پرمنحصر نہیں رہناچاہئے۔ ہماری معیشت اور تجارت بہتر ہے۔ ہمارے عہدیدار بہتر طورپر کام کررہے ہیں، ہمیں معاوضہ کی ضرورت نہیں ہے ۔ اورہمیںیقین ہے کہ ہم تیزرفتاری کے ساتھ ترقی کریںگے تب ہمیں وہ معاوضہ کیادیںگے۔جی ایس ٹی رنگا ریڈی کمشنریٹ اے آر ایس کمارنے کہاکہ تجارت میں خلل اندازی کے لئے جی ایس ٹی ہی سبب نہیں ہے۔ صدرنشین اسوچم نکھیل کوٹھاری ، سکریٹری جنرل ڈی ایس راوت اوردیگر نے بھی سمینارسے خطاب کیا۔

جواب چھوڑیں