میں اپنے بال پر چھکے کھانے کی پریکٹس کرتا تھا: کلدیپ یادو

 میں اپنے بال پر چھکے کھانے کی مشق کرتا تھا۔‘‘ بائیں ہاتھ کے اس چائنا مین بولر نے کہا ’’میں دبائو محسوس نہیں کرتا۔ یہ ایسی چیز ہے جو میں نے کافی جلدی سیکھ لی تھی اور آج میرے خلاف رن بننے پر میں نہیں ڈرتا۔‘‘ کلدیپ نے ساتھ ہی بیسکس صحیح رکھنے کی ضرورت پر بھی زور دیا۔ انہوں نے کہاکہ ’’اگر آپ وکٹ حاصل کرنا چاہتے تو آپ کو بال کو ٹرن کرانا ہوگا۔ اگر ٹرن یا ڈرفٹ نہیں ہورہی تو پھر آپ اسپنر نہیں ہیں۔‘‘ کلدیپ نے کہا ’’اگر اسپنر ٹی20میاچ میں چار سے پانچ وکٹ لیتا ہے تو آپ کی ٹیم فائدے میں ہوتی ہے۔ میں نے بچپن میں جو بھی سیکھا اسے یہاں نافذ کرنے کی کوشش کررہا ہوں۔‘‘ ٹاس ہاکر بیاٹنگ کرنے اترے انگلینڈ کو جوس بٹلر نے اچھی شروعات دلائی لیکن ہندوستانی بولنگ نے اپنی تنوع سے میاچ کا رخ پلٹ دیا۔ کلدیپ نے اپنے تیسرے اور اننگز کے 14ویں اوور میں تین وکٹ حاصل کیے جس پر کلدیپ نے کہا کہ ’’انگلینڈ نے بیاٹ سے کافی اچھ شروعات کی۔ چھ یا سات اوور میں ان کا اسکور65رن کے آس پاس تھا۔ جب میں بولنگ کے لیے آیا تو میں نے وکٹ دیکھی اور یہ ذرا سوکھی تھی۔‘‘ انہوں نے کہا کہ ’’میں نے اپنی رفتار میں تنوع کے ساتھ شروعات کی۔ مجھے لگا کہ اگر میں ذرا سست بال کروں تو موقع بنے گا۔ اس کے بعد جب میں دوسرے اوور میں بولنگ کے لیے آیا تو میں نے رفتار کم رکھی اور فلائٹ میں اضافہ کیا اور اسے برقرار رکھا۔‘‘ کلدیپ نے کہا ’’میرا منصوبہ بیاٹسمنس کو باہر نکالنے کا تھا جس سے کہ انہیں آسان بال نہ ملے۔‘‘ میں انہیں کوئی رفتار نہیں دینا چاہتا تھا کیو ںکہ اس سے ان کے لیے چیزیں آسان ہوجاتیں۔ میں اپنی رفتارمیں تبدیلی کررہاتھا۔‘‘ کلدیپ ٹی 20 اننگز میں پانچ یا اس سے زائد وکٹ حاصل کرنے والے بھوونیشور کمار اور یجویندر چہل کے بعد تیسرے ہندوستانی بولر ہیں۔ وہ انگلینڈ کی سرزمیں پر یہ کارنامہ کرنے والے دوسرے بولر ہیں۔ اس سے پہلے پاکستان کے عمر گل ہی انگلینڈ کی زمین پر اننگز میں پانچ وکٹ حاصل کرسکے تھے۔

جواب چھوڑیں