نجیب رزاق کو 10 لاکھ رِنگٹ نقد جمع کرانے پر ضمانت

 ملایشیا کے سابق وزیراعظم نجیب رزاق پر عدالت میں آج مجرمانہ اعتماد شکنی اور کرپشن کا الزام عائد ہوا۔ 2 ماہ قبل سرکاری سرمایہ کاری فنڈ میں کئی بلین ڈالر کے رشوت اسکینڈل کے نتیجہ میں وہ الیکشن ہار گئے تھے۔ انہوں نے تمام الزامات کی تردید کی۔ انہوں نے کوالالمپور ہائی کورٹ میں بہ مشکل سنائی دینے والی آواز میں کہا ’’آئی کلیم ٹرائل‘‘۔ استغاثہ نے 4 ملین رِنگٹ (لگ بھگ 1 ملین امریکی ڈالر) کے عوض ضمانت پر زور دیا لیکن جج نے ضمانت کی رقم 1 ملین رِنگٹ (2 لاکھ 50 ہزار امریکی ڈالر) نقد مقرر کی اور نجیب رزاق سے کہا کہ وہ اپنے 2 ڈپلومیٹک پاسپورٹ جمع کرادیں۔ عیش و عشرت کی زندگی گذارنے کے شوقین نجیب رزاق سوٹ میں ملبوس تھے اور انہوں نے سرخ رنگ کی ٹائی لگارکھی تھی۔ عدالت کامپلکس میں جب انہیں لایا گیا تو وہ پرسکون دکھائی دے رہے تھے اور مسکرارہے تھے۔ انہیں کل گرفتار کیا گیا تھا۔ ان پر اقتدار کے بے جا استعمال کا بھی الزام ہے۔ 64 سالہ نجیب رزاق نے ملایشیا کی نئی حکومت پر الزام عائد کیا کہ وہ ان سے سیاسی انتقام لے رہی ہے۔

جواب چھوڑیں