ومبلڈن2018: شاراپورا اور کیوتووا آئوٹ‘ نڈال، جوکووچ اگلے دور میں

سابق چمپئن ماریا شاراپوا کو ومبلڈن کے ویمن سنگلس کے پہلے دور میں ہی روس کی ہم وطن وتالیا دیاچینکو کے خلاف شکست کا سامنا کرنا پڑا جو گرانڈ سلام میں گزشتہ آٹھ سال میں ان کا سب سے خراب مظاہرہ ہے۔ 2014ء کی چمپئن شاراپووا کے علاوہ 2011ء اور 2014ء کی چمپئن چیک جمہوریہ کی پیترا کویتووا بھی بیلاروس کی الیگزنڈرا ساس نووچ سے ہارکر پہلے دور میں ہی باہر ہوگئی۔ مینس سنگلس میں حالانکہ دنیا کے نمبر ایک کھلاڑی اور دو بار کے چمپئن رافیل نڈال اور تین بار کے چمپئن نوواک جوکووچ دوسرے دور میں پہنچ گئے ہیں۔ دنیا کی 132ویں نمبر کی کھلاڑی کوالیفائر وتالیا کے خلاف شاراپووا ایک وقت5-2کی برتری کے ساتھ اچھے موقف میں تھیں لیکن حریف کھلاڑی نے پیٹھ میں زخم کے باوجود تین گھنٹے سے زائد چلے سخت مقابلے میں 6-7 (3/7), 7-6 (7/3), 6-4سے کامیابی حاصل کی۔ گزشتہ آٹھ سال میں گرانڈ سلام میں یہ شاراپووا کا سب سے خراب مظاہرہ ہے۔ اس سے پہلے وہ 2010ء میں آسٹریلیا اوپن کے پہلے دور میں ہار گئی تھیں۔ کویتووا کو بھی سخت مقابلے میں بیلاروس کی دنیا کی 50ویں نمبر کی کھلاڑی کے خلاف6-4, 4-6, 6-0 سے شکست جھیلنی پڑی۔ وہ پہلے دور میںہارنے والی چوتھی مشہور کھلاڑی ہیں۔ وہیں 17بار کے گرانڈ سلام چمپئن اور ومبلڈن میں 2008ء اور 2010ء کے فاتح نڈال ‘ اسرائیل کے ڈوڈی سیلا کو 6-3, 6-3, 6-2سے شکست دے کر دوسرے دور میں پہنچ گئے۔ جوکووچ نے بھی امریکہ کے ٹینس سینڈ گرین کے خلاف پہلے دور کے مقابلے میں 6-3, 6-1,6-2 سے کامیابی حاصل کی۔ ارجنٹینا کے جوآن ڈیل دیل پاترو نے جرمنی کے پیٹر گوجووجک کو 6-3, 6-4, 6-3سے شکست دی۔

جواب چھوڑیں